پاکستان

بلاول بھٹو اسٹیبلشمنٹ سے ڈیل کے سوال پر بڑھک اُٹھے

چیئرمین پی ٹی آئی و سابق وزیرِ خارجہ بلاول بھٹو زرداری صحافی کے اسٹیبلشمنٹ سے سمجھوتے کے سوال پر ناراض ہو گئے۔

اسلام آباد(کھوج نیوز) چیئرمین پی ٹی آئی و سابق وزیرِ خارجہ بلاول بھٹو زرداری صحافی کے اسٹیبلشمنٹ سے سمجھوتے کے سوال پر ناراض ہو گئے۔ ذوالفقار علی بھٹو کی پھانسی کے ریفرنس کی سماعت کے موقع پر سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ ہمیں امید ہے کہ وہ شخص جو پاکستان کے آئین کا بانی ہے اس کو عدالت سے انصاف ملے گا۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ چیف جسٹس نے خود کہا ہے کہ یہ موقع ادارے پر لگے داغ کو دھونے کا ہے، جو انصاف بیٹی اور اس کے والد کو نہ مل سکا، امید ہے نواسے کو ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کو اپنی شرائط پر ووٹ دیں گے، حکومت سازی میں دیر کرنے سے جمہوریت کا نقصان ہو رہا ہے، پیپلز پارٹی اپنے مؤقف پر ڈٹی ہوئی ہے، ہمارے مؤقف میں کوئی تبدیلی نہیں ہو گی۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ ہم اپنے مؤقف پر قائم ہیں، اسے تبدیل نہیں کریں گے، اگر کوئی اور اپنا مؤقف تبدیل کرتا ہے تو پروگریس ہو سکتی ہے، کوئی اپنا مؤقف تبدیل کرنے پر تیار نہیں تو مجھے بہت خطرناک تعطل نظر آ رہا ہے، اس تعطل کے نتیجے میں جو ہو گا وہ نہ جمہوریت اور نہ معیشت کے فائدے میں ہو گا، میرا خیال ہے کہ اس اسٹیج پر صدر ایسا کوئی فیصلہ نہیں دیں گے جس سے میں ناراض ہو جاؤں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button