پاکستان

جسٹس مظاہر نقوی نے سپریم جوڈیشل کونسل پر اعتراضات اٹھا دیئے

سپریم جوڈیشل کونسل کا آخری اجلاس 12جولائی 2021کو ہوا تھا، گزشتہ اجلاس کے بعد سے مزید شکایات موصول ہوئیں: سپریم جوڈیشل کونسل اجلاس کا اعلامیہ

اسلام (کھوج نیوز) جسٹس مظاہر نقوی نے سپریم جوڈیشل کونسل پر اعتراضات اٹھا دئیے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جسٹس مظاہر نقوی کی جانب سے اعتراضات سپریم جوڈیشل کونسل میں جمع کرا دیئے گئے۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس مظاہر نقوی نے چیف جسٹس قاضی فائز عیسی، جسٹس سردار طارق کی کونسل میں شمولیت پر اعتراض کر دیا۔ جسٹس مظاہر نقوی کی جانب سے جسٹس نعیم اختر افغان پر بھی اعتراض کیا گیا۔ جسٹس مظاہر نقوی نے سپریم جوڈیشل کونسل سے ریفرنس اور شواہد کی نقول بھی مانگ لیں۔اس سے قبل چیف جسٹس سپریم کورٹ قاضی فائز عیسی کی زیرصدارت سپریم جوڈیشل کونسل کے اجلاس کا اعلامیہ جاری کیا گیاتھا۔ سپریم جوڈیشل کونسل کے اجلاس کے اعلامیہ کے مطابق سپریم جوڈیشل کونسل کا آخری اجلاس 12جولائی 2021کو ہوا تھا، گزشتہ اجلاس کے بعد سے مزید شکایات موصول ہوئیں، چیف جسٹس قاضی فائز عیسی کی زیرصدارت اجلاس کا ایجنڈا شکایات پر غور کرنا تھا ،اجلاس میں کل 29شکایات پر غور کیا گیا، 29 شکایات میں 19 شکایات کو خارج کردیا گیا۔ اعلامیہ میں کہا گیا کہ جسٹس مظاہر علی نقوی کو شوکاز جاری کرنے کی 3 ممبران نے حمایت کی۔ جسٹس مظاہر نقوی کو 14دن میں جواب جمع کرانے کا وقت دیا گیا ہے،شکایت کی نقول بھی جسٹس مظاہر علی نقوی کو فراہم کردی گئی۔ بتایا گیا ہے کہ مظاہر علی اکبرنقوی کیخلاف 10شکایات درج کی گئیں ، کونسل نے 3، 2 کی اکثریت سے جسٹس مظاہر علی نقوی کو شوکاز نوٹس جاری کیا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button