نگر نگر سے

کراچی:طالبہ سیڑھیوں سےگرکرجاں بحق

نجی اسکول میں نویں جماعت کی طالبہ 14 سالہ اریبہ آصف سیڑھیوں سےگرکرجاں بحق ہوئی

کراچی کے علاقے عائشہ منزل میں نجی اسکول میں نویں جماعت کی طالبہ 14 سالہ اریبہ آصف سیڑھیوں سےگرکرجاں بحق ہوئی۔ ذرائع کے مطابق اسکول انتظامیہ کی کوتاہی سے بچی جاں بحق ہوگئی کیونکہ انتظامیہ بچی کو اسپتال لے کر نہیں گئی اور نہ ہی بچے کے گھر والوں کو فوراً اطلاع دی۔ بچی کی موت کی تصدیق کے بعد اسکول ٹیچر فرار ہو گیا۔ واقعہ کے بعد ڈائریکٹوریٹ آف پرائیویٹ انسٹی ٹیوشنز نے انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی جس میں ڈپٹی ڈائریکٹرعبدالستار میمن اورعامرانصاری بھی شامل ہیں۔ وزیرتعلیم و محنت سندھ سعید غنی نےنجی اسکول کی سیڑھیوں سےگرکرجاں بحق ہونے والی طالبہ کی خبر پرفوری نوٹس لے لیا۔

صوبائی وزیرنے ڈی جی پرائیویٹ اسکولزمنصوب صدیقی سے فوری طورپرواقعہ کی رپورٹ طلب کرتےہوئےکہا کہ اس بات کی مکمل تحقیقات کی جائے کہ سانحہ کیسے ہوا اورسانحہ کےبعد اسکول کی انتظامیہ نےکیوں فوری طورپربچی کواسپتال نہیں پہنچایا۔ ڈی جی پرائیویٹ اسکولزمنصوب صدیقی نے کہا کہ صوبائی وزیرکی ہدایات پرفوری طورپرڈپٹی ڈائریکٹرزپرمشتمل 2 رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی ہے اورمتعلقہ ڈپٹی ڈائریکٹرزنےاسکول کا دورہ کیا ہے۔ سانحہ کےحوالےسےتمام حقائق کی تحقیقات کررہےہیں۔

Back to top button