نگر نگر سے

کراچی:فیکٹری میں لگی آگ 3 محنت کشوں کونگل گئی

اطلاع ملی توفیکٹری میں کام کرنےوالےملازمین کےاہل خانہ بھی اپنے پیاروں کوڈھونڈنے پہنچ گئے

کراچی کے علاقے بلدیہ کی دھاگہ فیکٹری میں لگنے والی آگ تین محنت کشوں کو نگل گئی۔ فائر برگیڈ کی 4 گاڑیوں نے اسنارکل کی مدد سے قابو پایا۔ صوبائی وزیر سہیل انور سیال نے غفلت برتنے والوں کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرا دی۔

کراچی کےعلاقے بلدیہ پانچ نمبر پر دھاگہ فیکڑی میں لگنے والی خوفناک آگ نے تین افراد کو لقمہ اجل بنا دیا۔ آگ نے کچھ ہی دیر میں پوری عمارت کو لپیٹ میں لیا۔ اطلاع ملی تو فیکٹری میں کام کرنے والے ملازمین کے اہل خانہ بھی اپنے پیاروں کو ڈھونڈنے پہنچ گئے۔ فیکٹری ملازم شیر علی کے والد نے فائر برگیڈ کے سستی سے جاری آپریشن پر غم و غصے کا اظہار کیا۔

ادھر صوبائی وزیر سہیل انور سیال بھی جائے وقوعہ پہنچ گئے اور جانی نقصان کے زمہ داروں کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرا دی۔ چیف فائر آفیسر مبین احمد کے مطابق فیکٹری میں حفاظتی انتظامات موجود نہیں تھے۔

ساڑے 5 گھنٹے تک لگی رہنے والی آگ نے تین مزدوروں کو موت کی نیند سلا دیا۔ مرنے والوں کی شناخت شیر علی، کاظم اور فیاض کے ناموں سے کی گئی۔ ریسکیو آپریشن میں 4 فائر ٹینڈرز، اسنارکل اور واٹر باوزرس نے حصہ لیا۔ ابتدائی طور پر آتشزدگی کی وجہ شارٹ سرکٹ بتائی جا رہی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button