نگر نگر سے

پشاور:کھانا کھلانے پرشادی ہالزکےمنیجرزگرفتار

وائرس کی تیسری لہرکےدوران ضلعی انتظامیہ کی جانب سےضابطۂ اخلاق کی خلاف ورزی پر کریک ڈاؤن جاری ہے

خیبرپختون خوا کےدارالخلافہ پشاورمیں کورونا وائرس کی تیسری لہرکےدوران ضلعی انتظامیہ کی جانب سےضابطۂ اخلاق کی خلاف ورزی پرکریک ڈاؤن جاری ہے۔ ڈپٹی کمشنرپشاورکےمطابق ایس اوپیزکی خلاف ورزی پرتازہ ترین کارروائی کےدوران 2 شادی ہالزکےمنیجرزکو گرفتارکرکے 1 شادی ہال سیل کردیا گیا۔ پشاورکےڈپٹی کمشنرکا یہ بھی کہنا ہےکہ کورونا وائرس کی ایس اوپیزکےتحت پابندی کےباوجود شادی ہال کےاندرکھانا کھلایا جا رہا تھا۔ واضح رہےکہ خیبرپختون خوا میں کورونا وائرس کےمریضوں کی تعداد 89 ہزار 255 ہوچکی ہے،جبکہ اس سےکُل اموات 2 ہزار 382 ہوگئیں۔

ادھرپاکستان کورونا وائرس کی جاری تیسری لہرکےدوران مریضوں کی تعداد کےحوالےسےمرتب کی گئی فہرست میں 31 ویں نمبرپرپہنچ چکا ہے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر(این سی اوسی) کےاعداد وشمارکےمطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کےدوران کورونا وائرس کے مزید 5 ہزار 234 کیسزسامنےآئےہیں،مزید 83 افراد اس موذی وباء کےسامنےزندگی کی بازی ہارگئے،اس بیماری سے 1 ہزار 931 مریض شفایاب ہوگئے،جبکہ مثبت کیسزآنےکی شرح بڑھ کر 10 اعشاریہ 43 فیصد ہوگئی۔ ملک بھرمیں کورونا وائرس سےانتقال کرنےوالوں کی مجموعی تعداد 14 ہزار 613 ہوگئی ہے،جبکہ کُل مریضوں کی تعداد 6 لاکھ 78 ہزار 165 ہوچکی ہے۔

24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کےمزید 50 ہزار 170 ٹیسٹ کیئےگئے،جبکہ اب تک کُل 1 کروڑ 2 لاکھ 97 ہزار 544 کورونا ٹیسٹ کیئے جا چکےہیں۔ ملک بھرمیں اسپتالوں،قرنطینہ سینٹرزاورگھروں میں کورونا وائرس کےکُل 56 ہزار 347 مریض زیرِعلاج ہیں،جن میں سے 3 ہزار 384 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے،جبکہ 6 لاکھ 7 ہزار 205 مریض اب تک اس بیماری سےشفایاب ہوچکےہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button