نگر نگر سے

لودھراں؛ 2 لڑکوں کی 4 سالہ بچی سے اغوا کے بعد زیادتی

2 اوباش لڑکوں نے 4 سالہ بچی کو قبرستان سے اغوا کے بعد قریبی کھیتوں میں کے جا کر زیادتی کی اور بیہوش ہونے پر پھینک کر فرار ہوگئے۔

لودھراں کے نواحی علاقے جلالہ آباد کے رہائشی مزدور محمد یاسین کی 4 سالہ بیٹی مدیحہ اپنی دادای اور والدہ کے ساتھ دس محرم الحرام کو قبرستان میں دادا کی قبر پر فاتحہ خوانی کرنے کیلیے گئی تھی کہ وہاں سے 12 سے 13 سالہ ملزمان طارق اور کامران نے بچی کو اغوا کر لیا اور قریبی کھیتوں میں لے جا کر زیادتی کی اور بچی کے بے ہوشی کی حالت میں چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

قبرستان میں آنے والے افراد کھالے سے پانی لینے گئے تو ساتھ ہی کپاس کی فصل میں بچی بے ہوشی کی حالت میں پڑی پائی گئی جس پر بچی کی والدہ اور دادی اوٹھا کر گھر لے آئے بعد ازاں واقعہ کی اطلاع مقامی پولیس تھانہ صدر کو کی گئی اور بچی کا والد جو کہ محنت مزدوری کیلیے فیصل آباد گیا ہوا ہے جس پر چچا محمد وسیم بچی کو ڈسٹرکٹ اسپتال لے گیا۔

ملزمان کے خلاف تھانہ صدرِ لودھراں میں مقدمہ درج کرلیا گیا۔ملزم 13 سالہ طارق اور 12 سالہ کامران گرفتار کر لیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.