پاکستان

وزیراعظم کی چیف سیکرٹری سندھ کواہم ہدایت

وزیرِاعظم نےآٹے کی قیمتوں پرتشویش کا اظہارکرتے ہوئے چیف سیکرٹری سندھ کوہدایت کی کہ آٹے کی قیمت پرقابو پانے کےلئے اقدامات کئے جائیں

وزیرِاعظم عمران خان کی زیرصدارت اشیائے خوردونوش کی قیمتوں کے جائزے، پرائس کنٹرول، ذخیرہ اندوزی، ناجائزمنافع خوری اور ملاوٹ کی روک تھام کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا، جس میں وفاقی وزرا سمیت چاروں صوبائی چیف سیکرٹریزنے شرکت کی۔ صوبائی چیف سیکرٹریزنے وزیرِاعظم کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پنجاب، خیبرپختونخواہ اوروفاقی دارالحکومت میں مجموعی طورپرآٹے، چینی، چاول اوردیگراشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا اوربعض اشیاء کی قیمتوں میں کمی واقع ہوئی ہے، جب کہ صوبہ سندھ میں اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا۔

وزیرِ اعظم عمران خان نے کراچی میں آٹے کی قیمتوں پرتشویش کا اظہارکرتے ہوئے چیف سیکرٹری سندھ کوہدایت کی کہ آٹے کی قیمت پر قابو پانے کے حوالے سے فوری اقدامات کو یقینی بنایا جائے اور ذخیرہ اندوزوں اورناجائزمنافع خوری کے خلاف انتظامی اقدامات کو موثر بنایا جائے۔

وزیرِاعظم نے تمام صوبائی سیکرٹریزسے بنیادی اشیائے ضروریہ دودھ، گھی، تیل، پینے کے پانی، گوشت، مصالحوں، دالوں اوردیگراشیاء میں ملاوٹ کی صورتحال پربھی تفصیلی بریفنگ حاصل کی۔ وزیرِاعظم نے اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ کا سخت نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ اشیائے خوردونوش میں ملاوٹ کرنے والے عوام اورخصوصاً ہمارے بچوں کی صحت اورزندگیوں سے کھیل رہے ہیں، دودھ، گوشت، دالوں جیسی روزمرہ کی اشیا میں ملاوٹ کسی صورت قابل قبول نہیں، ملاوٹ کے خلاف قومی سطح پرایمرجنسی کانفاذ کرکے اس کا تدارک کیا جائے، ملاوٹ کے خاتمے  کے لئے ایک نیشنل ایکشن پلان ترتیب دیا جائے۔

وزیراعظم نے چاروں چیف سیکرٹریزکوہدایت کی کہ آئندہ ایک ہفتے میں ملاوٹ کے خلاف موثرحکمت عملی اورٹائم لائنز پر مبنی روڈ میپ ترتیب دیا جائے جسکا آئندہ ہفتے اجلاس میں جائزہ لیا جائے گا۔وزیرِاعظم کو بتایا گیا کہ صوبہ بلوچستان میں اشیائے خوردونوش میں  ملاوٹ چیک کرنے کے لئے لیبارٹری غیر فعال ہے۔ وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ بلوچستان میں فوڈ ٹیسٹنگ لیبارٹری کی فعالی میں وفاقی حکومت کی جانب سے ہر ممکنہ معاونت فراہم کی جائے۔

 

Tags
Back to top button
Close