پاکستان

قرض پروگرام، آئی ایم ایف کا بڑا اعتراف

پاکستان نے آئی ایم ایف پروگرام کے تمام اہداف پورے کیے، دسمبر تک تمام شعبوں میں بہتری ریکارڈ کی گئی

عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف)کا کہنا ہے کہ پاکستان نے آئی ایم ایف قرض پروگرام کے طے کردہ تمام اہداف پورے کیے ہیں۔

پاکستان میں موجود آئی ایم ایف وفد نے پاکستان میں مذاکرات کو حتمی شکل دینے کے بعد اعلامیہ جاری کردیا۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نے آئی ایم ایف پروگرام کے تمام اہداف پورے کیئے ہیں، دسمبر تک تمام شعبوں میں بہتری ریکارڈ کی گئی، زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ توقعات سے بھی بہتر رہا۔ ان سب تعریفوں کے باجود آئی ایم ایف مشن کی طرف سے پاکستانی حکام کے ساتھ اگلی قسط کے اجرا کے لیے معاہدے کا ذکر نہیں کیا گیا جبکہ ماضی کے برعکس پاکستان کی طرف سے کوئی اعلامیہ جاری نہیں کیا گیا۔

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مزاکرات اختتام پذیر ہو گئے اور جائزہ مشن کے دورے کے اختتام پر آئی ایم ایف نے اعلامیہ بھی جاری کر دیا۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کی معیشت نے گذشتہ چند ماہ میں قابل ذکر ترقی کی، مستحکم اقتصادی پالیسوں سے اصلاحات کے عمل میں تیزی لائی گئی، گذشتہ سال دسمبر تک تمام شعبوں میں کاکردگی بہتری رہی۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ آئی ایم ایف پروگرام پر تیز عمل درآمد بورڈ کو فیصلہ کرنے کی راہ ہموار کرے گا، پروگرام پر عمل درآمد سے ترقیاتی و سماجی شعبے کے لیے فنڈز میں اضافہ ہوا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مشن نے آنے والے دنوں میں پاکستان کو مزید کچھ اہداف مکمل کرنے کے لیے کہا ہے اور یہ اہداف توانائی کے شعبے اور ٹیکس وصولیوں سے متعلق ہیں۔

اعلامیے کے مطابق آئی ایم ایف وفد کے پاکستانی حکام سے مذاکرات تعمیری اور نتیجہ خیز رہے، پاکستانی حکام سے مذکرات میں پالیسی اور اصلاحات کے حوالے سے قابل ذکر پیش رفت ہوئی، پاکستان کی معیشت کی آٹ لک امید کے مطابق مجموعی طور پہلے جائزے کے ہم پلہ رہی اور کارکردگی کے حوالے سے پاکستان نے تمام معاشی اہداف پورے کیے۔

Tags
Back to top button
Close