پاکستان

پاکستان کو آئی ایم ایف سے چھٹکارا کیسے ملے گا، شاہد مسعود نے سب بتا دیا

ترکی کے لیے آئی ایم ایف سے 20 ارب ڈالر کا پیکج لیااور 2013ء میں اس سے پیچھا چھڑا لیا

معروف صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف سے پیچھا چھڑانے کے لیے وزیراعظم عمران خان کو ترک صدر طیب اردوان سے سیکھنا پڑے گا۔

تفصیلات کے مطابق سینئر تجزیہ نگار ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ ترکی 1947 سے آئی ایم ایف میں پھنسا ہوا تھا،ترکی کے ایک لیڈر عدنان میندورس نے 1954 میں آئی ایم ایف کے پاس جانے سے انکار کیا تھا،وہ انتخابات جیتے مگر آئی ایم ایف کا ترکی کی سیاست میں اتنا عمل دخل ہو گیا تھا تو اگلے انتخابات میں عدنان میدورس کا الیکشن ہروا دیا گیا،اور اس کے بعد ترکی معاشی طور پر کمزور سے کمزور تر ہو گیا۔

انہوں نے کہا اگر آئی ایم ایف سے جان چھڑائی ہے تو وزیراعظم عمران خان اور پاکستان ترک صدر رجب طیب اردوان سے سیکھنا ہو گا۔ 2001 میں جب ترکی میں معاشی بحران آیا تو ترکی نے کام دروس کی خدمات حاصل کیں جو 22 سال عالمی بینک سے منسلک رہے،انہوں نے ترکی کے لیے آئی ایم ایف سے 20 ارب ڈالر کا پیکج لیا،طیب اردوان نے 2008 میں کہا کہ وہ ترکی کا آئی ایم ایف سے پیچھا چھڑائیں گے اور انہوں نے 2013 میں آئی ایم ایف کی تیسری قسط ادا کر دی اور ترکی کا آئی ایم ایف سے پیچھا چھڑا دیا۔

Tags
Back to top button
Close