پاکستان

ن لیگ حکومت کیخلاف احتجاجی تحریک چلائے گی؟ تحقیقاتی رپورٹ

ن لیگ کی حکومت مخالف احتجاجی تحریک میں لاہور میں پارٹی کی تنظیم سازی مکمل نہ ہونا اور اندرونی اختلافات رکاوٹ بننے لگے ہیں

مسلم لیگ ن کا مہنگائی اور موجودہ ملکی سیاسی صورتحال پر حکومت مخالف احتجاجی تحریک کا اعلان صرف دعوں تک ہی محدود ہو کر رہ گیا۔ تحریک میں سب سے بڑی رکاوٹ ن لیگ کی نامکمل تنظیم سازی اور اندرونی انتشار ہے۔

ذرائع کے مطابق ن لیگ کی حکومت مخالف احتجاجی تحریک میں لاہور میں پارٹی کی تنظیم سازی مکمل نہ ہونا اور اندرونی اختلافات رکاوٹ بننے لگے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے لاہور کی تنظیم سازی کے حوالے سے لاہور کے چیف آرگنائزر سید توصیف شاہ نے بڑا کام کیا ہے لیکن لاہور کی موجودہ قیادت کی جانب سے کچھ رکاوٹیں پیش آ رہی ہیں۔ کارکنوں کے بڑھتے ہوئے دباؤ کے پیش نظر ن لیگ نے مارچ میں احتجاجی تحریک شروع کرنے کا عندیہ دیا تھا تاہم پیپلز پارٹی اور مولانا فضل الرحمن کی جانب سے مارچ میں حکومت مخالف تحریک کے اعلان کے بعد اب ن لیگ پر حکومت مخالف تحریک چلانے کے لئے بیرونی دباؤ بھی بڑھ گیا ہے۔ احتجاجی تحریک کے لئے ن لیگ کا ہوم ورک بھی مکمل نہیں۔

مارچ میں مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کی وطن واپسی پر بھی لاہور کی قیادت ان کے استقبال کے سلسلہ میں گو مگو کا شکار ہے۔ ن لیگ کے ذرائع کا کہنا ہے پارٹی قیادت کی طرف سے ایک وفد آئندہ چند دنوں میں مولانا فضل الرحمن کے پاس ان کے گلے شکوے دور کرنے کے لئے جائے گا اور انہیں منانے کے لئے کوشش کریگا۔ ذرائع کے مطابق ن لیگ سبکی سے بچنے کے لئے سہاروں کی تلاش میں ہے اور اس نے پیپلزپارٹی اور فضل الرحمن سے امیدیں باندھ لی ہیں کیونکہ اکیلے حکومت مخالف تحریک کی اہم پارٹی رہنماں کیطرف سے مخالفت کی جا رہی ہے۔

مسلم لیگ ن پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمی بخاری نے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ن لیگ نے تنظیم سازی مکمل کرنے کے لئے پارٹی کو ہدایات جاری کر دی ہیں۔ ن لیگ یہ چاہتی ہے کہ حکومت مخالف تحریک میں تمام اپوزیشن جماعتیں متحد ہوں، شہباز شریف مارچ میں واپس آرہے ہیں وہ حکومت مخالف تحریک کے لئے اپوزیشن رہنماں کو اعتماد میں لیں گے۔ انہوں نے کہا ن لیگ اکیلی بھی تحریکِ چلانے کی صلاحیت رکھتی ہے جس کی واضع مثال مریم نواز ہیں جو اکیلی ہی نکلی تھیں اس وقت انکے جلسوں کا میڈیا نے بھی بلیک آٹ کیا، حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئی تھی۔ انہوں نے کہا حکومت خوش فہمی کا شکار ہے یہ اس غلط فہمی میں ہی ماری جائے گی۔

Tags
Back to top button
Close