پاکستانفیچرڈ پوسٹ

مریم نواز نے والد کی صحت کے متعلق خاموشی توڑ دی

عدالت صرف ایک بار چار یا چھ ہفتوں کیلئے باہر جانے کی اجازت دے تاکہ وہ اپنے والد کا علاج کروا سکیں

سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے خاموشی توڑتے ہوئے کہا کہ پہلے ہی والدہ کھو چکی ہیں والد کا علاج کروانے کیلئے صرف ایک بار باہر جانے کی اجازت دی جائے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کی نائب صدر اور سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے کہا ہے کہ میرے والد کی طبیعت تشویشناک ہے ان کا آپریشن بہت ضروری ہے میں پہلے بھی اپنی والدہ کو بستر مرگ پر چھوڑ کر وطن واپس آ گئی تھی لیکن اب میں اپنا والد نہیں کھونا چاہتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں اپنے والد کے آپریشن کے بعد ان کی دیکھ بھال خود کرنا چاہتی ہوں۔ مجھے ایک بار باہر جانے کی اجازت دی جائے۔

واضح رہے کہ لاہور ہائی کورٹ میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے کیس کی سماعت ہوئی، جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے سماعت کی۔ مریم نواز کے وکیل کا کہنا تھا کہ عدالت صرف ایک بار چار یا چھ ہفتوں کے لیے باہر جانے کی اجازت دے تاکہ وہ جا کر اپنے والد کا علاج کروا سکیں، ہر قسم کی ضمانت دیتے ہیں کہ وہ واپس آ جائیں گی۔ جس پر نیب پراسیکیوٹر نے موقف اختیار کیا کہ مریم نواز سزا یافتہ ہیں، باہر جانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی تو مریم نواز کے وکیل کا کہنا تھا کہ مریم نواز کی سزا معطل ہو چکی ہے اور اس فیصلے میں باہر جانے پر کوئی قدغن نہیں لگائی گئی۔ عدالت نے مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے کیس کی سماعت 25 فروری تک ملتوی کرتے ہوئے میاں نواز شریف کی رپورٹس کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کی درخواست پر نیب سے جواب طلب کر لیا۔

Tags
Back to top button
Close