پاکستان

کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے کنٹینرز میں لیب بنانے کا فیصلہ

ابتدائی طور پر صوبے کے 29 اضلاع میں کنٹینرز میں کرونا تشخیصی لیب قائم کی جائے

قومی ادارہ امراض قلب نے حکومت سندھ کو کنٹینرز میں کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے لیب کے قیام کی تجویز دیدی اور کہا ہے کہ ہماری تکنیکی سپورٹ سے استعفادہ حاصل کرسکتی ہے۔

قومی ادارہ برائے امراض قلب کے چیسٹ پین کلینک کی طرز پر کراچی کے 19 ٹاویز یعنی 6 اضلاع سمیت اندرون سندھ کے 29 اضلاع میں کینٹینرز فوری طور پر نصب کرکے کرونا کے مریضوں کی تشخیص کا عمل شروع کیا جاسکتا ہے۔

اسپتال کے ایگزیکٹوایڈمنسٹریٹر ڈاکٹر حمید اللہ ملک نے بتایا کہ اسپتال کے سربراہ پروفیسر ندیم قمر نے حکومت سندھ کو تجویزدی ہے کہ کراچی سمیت اندرون سندھ کے تمام اضلاع یعنی ضلعی سطح پرکرونا کی ٹیسٹنگ کے لیے قومی ادارہ امراض قلب کے چیسٹ پین chest pain clinic کی طرز پر کینٹینرز میں ٹیسٹنگ کی لیب قایم کردی جایے اور ضلعی ویونین کونسل کی سطح پرعوام کی ٹیسٹنگ کا عمل ہنگامی بنیادوں پر شروع کیا جائے تاکہ یہ معلوم کیاجاسکے کہ صوبے میں کتنے لوگ اس وبا سے متاثر ہیں۔ ڈاکٹر حمید اللہ ملک کا کہنا تھا کہ ابتدائی طور پر صوبے کے 29 اضلاع میں کنٹینرز میں کرونا تشخیصی لیب قائم کی جائے۔

Tags
Back to top button
Close