پاکستانفیچرڈ پوسٹ

نوازشریف کی نا اہلی متنازعہ، جہانگیر ترین نے جلتی آگ پر تیل ڈال دیا

نوازشریف کو سوچی سمجھی سازش کے تحت نا اہلی کروایا گیا، ان کی نا اہلی بنتی نہیں تھی، مجھے اس بات پر دکھ ہے

پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء جہانگیر ترین نے جلتی آگ پر تیل ڈالتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد اور سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی نا اہلی متنازعہ تھی۔

کھوج نیوز ذرائع کے مطابق تحریک انصاف کے رہنماء جہانگیر ترین نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کے خلاف نا اہلی کا آنے والا فیصلہ متنازعہ تھا۔ نوازشریف کو نا اہل ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت کیا گیا تھا جبکہ وہ نااہل نہیں ہوسکتے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوازشریف کے فیصلے کو بیلنس کرنے کے لئے مجھے نا اہل کیا گیا۔ جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ مجھے نا اہل اس لئے کروایا گیا تا کہ نواز شریف کے فیصلے کو بیلنس کیا جا سکے ورنہ میری نااہلی بنتی نہیں تھی، میرے اثاثے ڈیکلئیرڈ تھے، تمام منی ٹریل موجود تھی اور نااہل صرف اس لئے کیا گیا کہ اثاثے بچوں کے نام پر تھے۔

نوازشریف کی نا اہلی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ ان کی نا اہلی بنتی نہیں تھی، مجھے اس بات پر دکھ ہے۔ جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ اگر نوازشریف عمران خان مقتدر حلقوں کے کہنے پر چلتے تو شاید وہ کبھی نا اہل نہ ہوتے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ جہانگیر ترین بھی اس بات کا اعتراف کر چکے ہیں کہ ان کی دوستی اب پہلے جیسی نہیں رہی۔ اس تلخی کے بعد جہانگیر ترین کی جانب سے بھی مختلف بیانات دیئے گئے ہیں جو بظاہر پاکستان تحریک انصاف کے لئے کہیں نہ کہیں مشکلات بھی پیدا کر سکتے ہیں۔ ایسا ہی ایک بیان اب سامنے آیا ہے جس میں جہانگیر ترین نے اعتراف کیا ہے کہ نوازشریف کی نااہلی متنازعہ تھی۔

Tags
Back to top button
Close