پاکستان

کراچی میں دہشتگردوں کا دستی بم سے حملہ، دکان مالک جاں بحق

حملہ آورموٹرسائیکل پرسوارتھے اور حملے میں جاں بحق شخص رینجرزکا ریٹائرڈ ملازم تھا: ایس ایس پی ایسٹ

کراچی کے علاقے سچل میں دہشتگردوں نے ایک دکان پر دستی بم سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں دکان کا مالک جاں بحق ہوگیاجبکہ ملزمان موقع پر فرار ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس ایس پی)ضلع شرقی کے مطابق سچل بلاول گوٹھ میں دکان پر دستی بم حملہ کیا گیا ہے۔ ایس ایس پی ایسٹ کے مطابق حملہ آورموٹرسائیکل پرسوارتھے اور حملے میں جاں بحق شخص رینجرزکا ریٹائرڈ ملازم تھا۔ خیال رہے کہ جون کے مہینے میں بھی کراچی، لاڑکانہ اور گھوٹکی میں مختلف اوقات میں رینجرز پر حملے کیے گئے تھے جن میں روسی ساختہ دستی بم استعمال ہوئے تھے۔ سکیورٹی اور تفتیشی حکام کے مطابق کراچی میں رینجرز پر حملے کے لیے روسی ساختہ ہینڈ گرینڈاستعمال کیا گیا اور موقع سے اداروں کو روسی ساختہ گرینڈ کی پلیٹ ملی تھی۔ لاڑکانہ میں بھی حملے میں گرینڈ استعمال کیا گیا جب کہ گھوٹکی میں بھی رینجرز حکام کی گاڑی کے قریب دھماکے میں آئی ای ڈی استعمال نہیں کی گئی اور ایسا لگتا ہے کہ گھوٹکی میں بھی حملے میں ہینڈ گرینڈہی استعمال کیا گیا۔

حکام کا بتانا ہے کہ دہشت گردوں کی جانب سے ہینڈ گرینڈز کے استعمال کی خاص وجہ ہوسکتی ہے، ہینڈ گرینڈ کی پن نکال کر پھینکنے اور فرار کی کوشش میں 8 سے 10 سیکنڈز لگتے ہیں، یہ پھینکنے کے بعد فوری طور پر نہیں پھٹتا جس سے توجہ اس جانب نہیں جاتی، یہ اتنا وقت ہوتا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں سے بھاگ نکلنے کا موقع مل جاتا ہے۔ جن ہینڈ گرینڈسے حملے کیے گئے اسی طرز کے ہینڈ گرینڈز حساس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے برآمد کیے تھے، یہ ہینڈ گرینڈز بھارتی خفیہ ایجنسی ‘را’ کے سلیپر سیلز سے برآمد کیے گئے تھے۔

Tags
Back to top button
Close