پاکستان

کے الیکٹر ک کی غفلت و لاپرواہی، 6 افراد جان کی بازی ہار گئے

کرنٹ سے شہریوں سے ہلاکت پر دکھ اور افسوس کا اظہار 'ذمہ داروں کا تعین کر کے سخت ایکشن لیا جائیگا: شیخ امتیاز

کراچی میں کے الیکٹرک کی غفلت و لاپرواہی اور ناقص انتظامات کی وجہ سے تاریں ٹوٹنے کے باعث ایک ہی دن کرنٹ لگنے سے 6 افراد جان کی بازی ہار گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں تاریں ٹونے اور کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہونے والے افراد میں ناگن چورنگی کے قریب دس سالہ احمد رضا کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہوا جبکہ اسی علاقے میں نجی بینک کے قریب کرنٹ لگنے سے تیس سالہ شخص بھی دم توڑ گیا۔ اس کے علاوہ کریم آباد دارالسلام مسجد کے قریب کام کے دوران کرنٹ لگنے سے انچاس سالہ مرزا رحمان نامی شہری جان کی بازی ہار گیا۔

ہجرت کالونی اور ماڈل کالونی میں گھروں میں کرنٹ لگنے سے دو افراد جاں بحق ہو گئے۔ کارساز روڈ پر پیر پگارا ہاس کے قریب بجلی کے تار ٹوٹنے کے باعث کرنٹ لگنے سے موٹر سائیکل سوار کی جان چلی گئی۔ صوبائی وزیر توانائی امتیاز شیخ نے بارشوں کے نتیجے میں کرنٹ سے ہلاکتوں پر نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری پاور ڈویژن چیئرمین نیپرا اور ایم ڈی کے الیکٹرک سے رابطہ کیا ہے۔ امتیاز شیخ نے کرنٹ سے شہریوں سے ہلاکت پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ ذمہ داروں کا تعین کر کے سخت ایکشن لیا جائے۔

Tags
Back to top button
Close