پاکستانفیچرڈ پوسٹ

مولانا فضل الرحمن نے ن لیگ اور پیپلز پارٹی کو حکومت کا سہولت کار قرار دیدیا

ن لیگ اور پیپلز پارٹی نے کہا تھا کہ اب حکومت کے ساتھ نہیں بیٹھیں گے پھر اچانک راتوں رات ترامیم دے دیں

جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے ن لیگ اور پیپلز پارٹی کو حکومت کا سہولت کار قرار دیتے ہوئے حکومت مخالف تحریک تنہاء چلانے کا اشارہ دیدیا۔

کھوج نیوز ذرائع کے مطابق جمعیت علماء اسلام نے ن لیگ اور پیپلز پارٹی کو حکومتی سہولت کار قرار دے دیا۔ مولانا فضل الرحمن نے اپوزیشن کی رہبر کمیٹی اور آل پارٹیز کانفرنس پر سوالات اٹھاتے ہوئے حکومت مخالف تحریک تنہا چلانے کا اشارہ دیدیا، فضل الرحمن نے کہا ہے کہ ایف اے ٹی ایف سے متعلق قانون سازی پر اپنا موقف ایوان میں دینا چاہتے تھے، کل بھی ہمیں نہیں سنا گیا اور آج بھی نہیں سنا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ایسا تاثر دیا گیا کہ ہم اختلاف برائے اختلاف کر رہے ہیں جب کہ ہم نے ہمیشہ قانون سازی میں اہم کردار ادا کیا، آئین پر حملے روکنے میں بھی ہم سنجیدہ تھے۔

سربراہ جمعیت علماء اسلام کا مزید کہنا تھا کہ جنھوں نے سینیٹ اور قومی اسمبلی میں بل پیش کیاان کے قانون دان ہونے پر اعتراض نہیں لیکن وہ خود مجبور اور ہیں اختیار ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ افسوس ہے کہ اپوزیشن کا کل فلور پر بیان آ گیا تھا کہ اب حکومت کے ساتھ نہیں بیٹھیں گے پھر اچانک اتنی بڑی پیشرفت ہو گئی کہ پیپلز پارٹی اور ن لیگ نے راتوں رات ترامیم دے دیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی اور نون لیگ کی یہ ترامیم آج منظور بھی ہو گئی، پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن نے حکومت کے لئے سہولت کار کا کردار ادا کیا ہے۔

Tags
Back to top button
Close