پاکستان

سعودی عرب سے تیل ادھار لینے کا معاملہ، وزارت خزانہ نے وضاحتی بیان داغ دیا

سعودی عرب سے ادھار تیل کی سہولت 9 جولائی کو ختم ہوگئی ہے اور اس میں توسیع کی درخواست زیر غور ہے

ترجمان وزارت خزانہ نے سعودی عرب سے تیل ادھار لینے کی سہولت سے متعلق وضاحتی بیان داغتے ہوئے کہا کہ تیل ادھار لینے کی سہولت ختم ہو چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزارت خزانہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب سے 3 ارب 20کروڑ ڈالر کا تیل ادھار ملنے کی سہولت ایک سال کے لیے تھی جس کی تجدید ہوسکتی تھی۔ ترجمان وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ سعودی عرب سے ادھار تیل کی سہولت رواں سال 9 جولائی کو ختم ہوگئی ہے اور اس معاہدے میں توسیع کی درخواست سعودی عرب کے ساتھ زیر غور ہے۔

Back to top button