پاکستانفیچرڈ پوسٹ

سیاسی شطرنج بچھ گئی،آصف زرداری اور عمران خان میں ڈیل

سیاسی شطرنج بچھ گئی،آصف زرداری اور عمران خان میں ڈیل،کس نے صلح سے انکارکیا،کون ہاتھ ملانے کو تیار،بڑی ہلچل

سیاسی شطرنج بچھ گئی،آصف زرداری اور عمران خان میں ڈیل،کس نے صلح سے انکار کیا،کون ہاتھ ملانے کو تیار،بڑی ہلچل سینئر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور سابق صدر آصف علی زرداری کی ملاقات کروانے کی پوری کوشش کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں کی جانب سے کوشش کی جا رہی ہے کہ سابق صدر اور وزیراعظم عمران خان کی ملاقات کرا دی جائے لیکن عمران خان اس پر تیار نہیں ہو رہے اور یہ کوشش الیکشن سے پہلے بھی کی گئی تھی جب کہ 2013ءسے پہلے یہ کوشش بھی ہوئی تھی کہ عمران خان اور مسلم لیگ ن کی دوستی کرا دی جائے اور عمران خان اس پر نہیں مانے تھے۔انہوں نے مزید کہا کہ 2018ء کے بعد پیپلز پارٹی کی جانب سے کہا گیا تھا کہ آپ آ کر بیٹھیں لیکن عمران خان کراچی گئے اور دو تقریریں کر کے واپس آ گئے۔ڈاکٹر شاہد مسعو دکا مزید کہنا تھا کہ عمران خان اور پاکستان تحریک انصاف کے کچھ پرانے لوگ اس ملاقات پر تیار نہیں ہیں جب کہ دوسری طرف بلاول بھٹو بھی ملاقات نہیں چاہ رہے تھے اور اس وقت بیانات کی بمباری کر رہے ہیں لیکن زرداری صاحب کو کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

قبل ازیں سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا تھا کہ وزیراعظم عمران خان دورہ کراچی کے دوران خوش نہیں تھے، عمران خان کا موڈ ٹھیک نہیں تھا ظاہر ہے مراد علی شاہ ساتھ ہوئے ہیں، پیسوں کے حساب کتاب میں کچھ گڑبڑ ہوئی ہے، کراچی پلان کے پیسوں کو ایک کمیٹی دیکھے گی، کمیٹی کے سربراہ وزیراعلیٰ سندھ ہوں گے۔ انہوں نے اپنے تبصرے میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے 11سو ارب کا اعلان کیا ہے، پیسا تو ہمارے پاس بہت ہے، باہر کے ممالک سے قرض بھی لیا ہے، حفیظ شیخ ان کے ساتھ تھے، پیسا تو ہمارے پاس بہت زیاد ہے۔عمران خان آج دورہ کراچی میں خوش نہیں تھے، میں کسی سے پوچھا تو انہون نے کہا کہ عمران خان کا موڈ ٹھیک نہیں تھا ظاہر ہے مراد علی شاہ ساتھ ہوئے ہیں،انہوں نے میڈیا کے سوالوں کے جواب بھی نہیں دیے۔ انہوں نے بات کی اور وہاں سے چلے گئے۔ شاہد مسعود نے کہا کہ پیسوں کے حساب کتاب میں کچھ گڑبڑ ہوئی ہے۔ 162ارب جو پچھلے سال دیا گیا تھا، 60ارب سندھ حکومت کو کورونا کی مد میں ملا ہے۔800ارب سندھ حکومت خرچ کررہی ہے، اسی طرح اب وزیراعظم نے 1100ارب پیکج کا اعلان کیا ہے۔ان سب پیسوں کو ایک کمیٹی دیکھے گی۔ اس کمیٹی کے سربراہ وزیراعلیٰ سندھ ہوں گے۔

Back to top button