پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ایم کیو ایم نے حکومت کو سنگین نتائج کی دھمکی دیدی

ایم کیو ایم نے حکومت کو سنگین نتائج کی دھمکی دیدی، کراچی کو نیا صوبہ بنانے کی تحریک زور پکڑنے لگی

ایم کیو ایم نے حکومت کو سنگین نتائج کی دھمکی دیدی، کراچی کو نیا صوبہ بنانے کی تحریک زور پکڑنے لگی رہنما ایم کیو ایم پاکستان خالد مقبول صدیقی کا کہنا ہے کراچی کو الگ صوبی بنا یا جائے ورنہ حکومت کے خلاف فیصلہ کن تحریک چلائیں گے انھوں نے مذید کہا کہ کہ ہمیں اُمید ہے کراچی پیکیج صرف اعلان نہیں ہے بلکہ اُس پر عمل بھی ہوگا۔ کراچی میں ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں نے مشترکہ پریس کانفرنس کی، جس میں وسیم اختر، کنور نوید جمیل، خالد مقبول صدیقی اور فیصل سبزواری موجود تھے۔ اس دوران خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ اللّٰہ کا شکر ہے کہ ایک قومی اتفاق رائے تو ہوا ہے، ایم کیو ایم کو مینڈیٹ حاصل ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ ایم کیو ایم نے کراچی پیکیج کو خوش آمدید کہا ہے، کئی بار کراچی کے لیے اعلانات ہوئے لیکن ہوا کچھ نہیں، اس مرتبہ عوام کو اُمید ہے اور دعا ہے کہ کراچی پیکیج پر یقین بھی آجائے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کراچی پیکیج کےاعلان پر شک و شبہات کا اظہار نہیں کرنا چاہتے، ہمیں اُمید ہے کہ کراچی پیکیج صرف اعلان نہیں اس پر عمل بھی ہوگا، کراچی سے لینے کاحق سب کا ہے مگر دیتا کوئی نہیں۔

رہنما ایم کیوایم پاکستان نے کہا کہ کیاوجہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے کراچی کی منتخب بلدیاتی حکومت کو پیکیج نہیں دیا، وزیراعظم کو کراچی پر 1100 ارب لگانے تھے تو منتخب بلدیاتی حکومت کے ذریعے لگاتے، خدشات نے یقین کی صورت اختیار کرلی جب ایڈمنسٹریٹر کا تعین ہوا۔

انہوں نے کہا کہ یہ ثابت کیاجارہا ہے کہ سندھ میں نہ کسی کو تعلیم، نہ نوکریاں، نہ ترقیاں ملیں گی، وفاق نے فیصلہ کیا کہ اتحادی حکومت کے بجائے کرپشن کی تاریخ رکھنے والی حکومت سے ترقی کروائے گی، آپ نے اگر یہ پیسے لگانے تھے تو ان کے ذریعے لگاتے جو اس شہر کو جانتے ہیں۔

Back to top button