پاکستان

جنسی زیادتی:سرعام پھانسی دی جائے،حکومتی شخصیات

خاتون کےساتھ پیش آنےوالےجنسی زیادتی کےواقعےنےعوام کےساتھ حکومتی شخصیات کوبھی جھنجھوڑکررکھ دیا

لاہورموٹروے پرخاتون کےساتھ پیش آنےوالےجنسی زیادتی کےواقعےنےعوام کےساتھ حکومتی شخصیات کوبھی جھنجھوڑکررکھ دیا ہےاور متعدد حکومتی شخصیات نےزیادتی کےمجرمان کوسرعام پھانسی دینےکا مطالبہ کیا ہے۔ گزشتہ دنوں لاہورموٹروے پرایک انتہائی خوفناک حادثہ پیش آیا جب ایک خاتون کواس کےبچوں کےسامنےنامعلوم افراد نےزیادتی کا نشانہ بنایا۔ اس واقعےنےایوانوں اورپورے ملک کوجھنجھوڑکررکھ دیا ہے۔

عام عوام کےساتھ اب حکومتی شخصیات بھی ملک میں بچوں اورخواتین کے ساتھ پےدرپےہورہےزیادتی کےواقعات پرپھٹ پڑے ہیں اور معصوموں کواپنی ہوس کا نشانہ بنانےوالوں کےلیےسرعام پھانسی کامطالبہ کررہےہیں۔ وفاقی وزیربرائےآبی وسائل فیصل واڈا نےاس دل دہلادینےوالےواقعےپرافسوس کاا ظہارکرتےہوئےکہا ’’ انتہائی دل دہلا دینےوالاموٹروے سانحہ۔ ایک اورحوا کی بیٹی کی عصمت دری۔ ننھی مروہ اوراب یہ- تمام پارلیمنٹیرینزسےاستدا ہےکہ خدارا ان درندوں کی سرعام پھانسی کی قانون سازی کےلئےایک ہو- اس ٹوئٹ کےساتھ فیصل واڈا نےسرعام پھانسی کا ہیش ٹیگ بھی استعمال کیا۔‘‘

Back to top button