پاکستان

نوازشریف واپس نا آئےتوکیا نقصان ہوگا؟حافظ حسین نےسچ اگل دیا

حافظ حسین احمد کا کہنا تھا کہ حکمران اوران کےپشتی بان چاہتےہیں کہ نوازشریف بیرون ملک رہیں

جمعیت علمائےاسلام (جے یو آئی) ف کےمرکزی ترجمان حافظ حسین احمد کا کہنا ہےکہ حکومت کےخلاف فیصلہ کن تحریک اوراپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس (اے پی سی) سےپہلےنوازشریف کو واپس آنا ہوگا۔ ایک بیان میں حافظ حسین احمد نےکہا ہےکہ حالات کےتناظرمیں نواز شریف کوفوری واپس آنا چاہیے، ہمیں نوازشریف کی بیماری اورمسائل کا احساس ہےلیکن ووٹ کوعزت دوکےبیانیےاورحکومت مخالف تحریک کا فیصلہ ٹیلیفون یا خط کےذریعےسےممکن نہیں ہے۔

حافظ حسین احمد کا کہنا تھا کہ حکمران اوران کےپشتی بان چاہتےہیں کہ نوازشریف بیرون ملک رہیں اورخاموش رہیں۔ ان کا کہنا ہےکہ وطن کی فضا میں نوازشریف کےداخل ہونےسےہی اکثرمعاملات واضح ہوسکتےہیں اوران افواہوں کا خاتمہ ہوسکتا ہےجن میں الزام ہےکہ حکومت کو 5 سال پورےکرنےکی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔  مرکزی ترجمان جےیوآئی ف کےمطابق اپوزیشن جماعتوں نےمیثاق جمہوریت کے بجائےمیثاق مفاہمت کواہمیت دی تودرست نہیں ہوگا، متحدہ اپوزیشن کےاتحاد کےلیےاے پی سی آخری موقع ہو سکتا ہے۔

Back to top button