پاکستان

موٹروے خاتون زیادتی کیس،سی سی پی اولاہورکی طلبی

چیف جسٹس ہائیکورٹ نے ریمارکس دیئےکہ سی سی پی اوکےبیان پرپوری کابینہ کومعافی مانگنی چاہیئےتھی

لاہورہائیکورٹ نےموٹروے خاتون زیادتی کیس میں سی سی پی اولاہورکودوپہرایک بجےعدالت طلب کرلیا۔ عدالت نےواقعہ کی تحقیقات کیلئے قائم کمیٹی کا نوٹیفکیشن بھی طلب کرلیا۔ لاہورہائیکورٹ میں موٹروے پرخاتون زیادتی کیس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس ہائیکورٹ نے ریمارکس دیئےکہ سی سی پی اوکےبیان پرپوری کابینہ کومعافی مانگنی چاہیئےتھی،کابینہ معافی مانگتی توقوم کی بچیوں کوحوصلہ ہوتا،پنجاب حکومت کےوزرا سی سی پی اوکوبچانے میں لگ گئے، لگتا ہےسی سی پی اولاہوروزرا کا افسرہے۔ چیف جسٹس ہائیکورٹ نےکہا اتنا بڑا واقعہ ہوگیا لیکن حکومت کمیٹی کمیٹی کھیل رہی ہے، وزرا کےایڈوائزرموقع پرجا کرتصاویربنوا رہےہیں، کیا تفتیش کرنا وزیرقانون کا کام ہے ؟ کیا وزیرقانون کوتفتیش کا تجربہ ہے؟ وزیرقانون کس حیثیت سےکمیٹی کی سربراہی کررہےہیں؟۔

Back to top button