پاکستان

آبائی علاقے پر ملزم شفقت کی دہشت قائم؛لوگ بات کرنے سے خوفزدہ

لاہور رنگ روڈ زیادتی کیس کا دوسرا ملزم شفقت بہاولنگر کی تحصیل ہارون آباد کا رہائشی ہے اور 6 ماہ پہلے پورا خاندان علاقہ چھوڑ گیا لیکن ان کی دہشت آج بھی ختم نہیں ہوئی۔

اہل علاقہ کے مطابق پورا خاندان ڈکیتی کی وارداتوں میں ملوث ہے اور انہوں نے علاقے میں خوف کی فضا قائم کر رکھی تھی، اہل علاقہ ان کے بارے میں کھل کر بات کرتے ہوئے ڈرتے ہیں۔اہل علاقہ نے بتایا کہ ملزم شفقت اور اس کا بھائی بابر بھی عابد کے ساتھ وارداتوں میں ملوث تھے، 2019 میں شفقت کے بھائی بابر نے ریپ کیس کے مرکزی ملزم عابد کے ساتھ ایک بیوہ خاتون کے ساتھ واردات کی اور  ضمانت پررہا ہو کر آیا تو متاثرہ خاتون کے خاندان کو دھمکیاں دیتا رہا۔ملزم شفقت کے آبائی گاؤں میں لوگ ابھی تک اُن سے ڈرے ہوئے تھے اور زبان کھولنے سے کتراتے رہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 6 ماہ پہلے شفقت اپنے باپ اللہ دتہ اور بھائی بابر کے ساتھ یہاں سے نکل گیا، انہیں معلوم نہیں کہ وہ اب کہاں ہیں۔؟

Back to top button