پاکستان

انگریز سائنسدان بن سکتے ہیں تو ہمارے لوگ کیوں نہیں ؟وزیر اعظم کا افتتاحی تقریب میں سوال

 وزیر اعظم عمران خان نے پاک آسٹریا انسٹیٹیوٹ آف اپلائیڈ سائنسز کا افتتاح کر دیا۔

عمران خان نے اپنے دورہ ہری پور کے دوران پاک آسٹریا انسٹی ٹیوٹ آف اپلائیڈ سائسنز اینڈ ٹیکنالوجی کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ اپنے کارناموں کی تعریف کے بجائے انسان کو مزید کام پر توجہ دینی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ کمیونزم قوموں کے لیے تباہی ہے اور یہ تاثر کہ مغرب ہی ترقی کرسکتا ہے ہم نہیں کرسکتے یہ غلط ہے۔ انگریز کی غلامی کے ذہن اور سوچ کو تبدیل کرنا ہو گا۔ ہم کچھ اس لیے نہیں کر سکتے کیونکہ ہم کاپی کرتے ہیں۔وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ انگریز سائنسدان بن سکتے ہیں تو ہمارے لوگ کیوں نہیں ؟ ہم نے ذہنوں کو اچھی غلامی کی سوچ سے نجات دلانی ہے، ہم خود مختار لوگ ہیں اور خود کچھ کرنے کا عزم رکھتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں نوجوانوں کی شرح زیادہ ہے اور ترقی بھی ممکن ہے۔ ہمیں بگ ڈیٹا، آرٹیفشلز انٹیلی جنس اور دیگر ٹیکنالوجی سے مدد لینی چاہیے۔ ہم خود مختار لوگ ہیں اور خود کچھ کرنے کا عزم رکھتے ہیں۔

Back to top button