پاکستانفیچرڈ پوسٹ

نوازشریف کو وطن واپس لانےمیں ناکامی کا سامنا،بڑا خطرہ لاحق

نوازشریف کو وطن واپس لانے میں ناکامی کا سامنا، بڑا خطرہ لاحق‘ برطانیہ نےعمران خان حکومت پراپنی پالیسیاں کھل کرواضح کردیں

نوازشریف کو وطن واپس لانے میں ناکامی کا سامنا، بڑا خطرہ لاحق‘ برطانیہ نےعمران خان حکومت پراپنی پالیسیاں کھل کرواضح کردیں ،برطانیہ نے واضح کیا ہے کہ وارنٹس کی تعمیل کروانا ان کا کام نہیں ہے، پاکستان کے اندرونی سیاسی معاملات میں مداخلت نہیں کرے گی حکومت کو نوازشریف کو وطن واپس لانے میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ برطانیہ نے بھی وزیراعظم عمران خان پر اپنی پالیسیاں کھل کر واضح کر دی ہیں۔
برطانوی حکومت نے نوازشریف کے وارنٹ کی تعمیل کروانے سے انکار کردیا، برطانوی حکام نے کہا کہ وارنٹس کی تعمیل کروانا ان کا کام نہیں ہے، پاکستان کے اندرونی سیاسی معاملات میں مداخلت نہیں کرے گی۔ سفارتی ذرائع کے مطابق گزشتہ روز جمعرات کو بھی ہائی کمیشن کے دوعہدے دار ڈن ریون اسٹریٹ پر10منٹ تک انتظار کرتے رہے۔لیکن ہائی کمیشن کے عہدیدار ایون فیلڈ کے استقبالیہ پر پہنچے بغیر ہی واپس چلے گئے۔
بتایا گیا ہے کہ دفتر خارجہ کے توسط سے برطانوی حکومت سے وارنٹس کی تعمیل میں مدد کی درخواست کی گئی تھی۔ جس پر برطانوی حکومت نے کہا کہ وہ پاکستان کے اندرونی سیاسی معاملات میں مداخلت نہیں کریگی۔ وارنٹس کی تعمیل ان کا کام ہے نہ ہی مینڈیٹ ہے۔ذرائع نے مزید بتایا کہ پاکستان ہائی کمیشن کے پاس نوازشریف کے وارنٹ کی تعمیل کے محدود آپشن ہیں۔پاکستانی ہائی کمیشن رائل میل یا اپنیعملے کے ذریعے وارنٹس کی تعمیل کرا سکتا ہے۔ دونوں صورتوں میں نوازشریف پرانحصار ہوگا کہ وہ رضاکارانہ طور پر دستخط کریں۔ پاکستانی ہائی کمیشن اس صورتحال سیاسلام آباد ہائیکورٹ کو آگاہ کرچکا ہے۔
Back to top button