پاکستانفیچرڈ پوسٹ

وطن کی محبت میں جان کی قربانی دینے کا فیصلہ کرلیا گیا‘ نوازشریف کی وطن واپسی کی تاریخ کا اعلان سامنے آگیا

اپوزیشن نے جو ہاتھوں پر مہندی لگا رکھی تھی اس کا رنگ چڑا ہے یا نہیں لیکن انہوں نے یہ مہندی اب اتارنے کا فیصلہ کر لیا ہے

سینئر صحافی اور تجزیہ کار حفیظ اللہ نیازی کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے وطن کی خاطر قربانی دینے کا فیصلہ کر لیا ہے چاہے وہ بیمار ہوں یا صحت مند وہ سب کچھ چھوڑ کر 13 دسمبر کو وطن واپس پہنچ سکتے ہیں، اور پھر انہیں لاہور سے سیدھا اسلام آباد اڈیالہ جیل منتقل کر دیا جائے گا لیکن اس بار وہ اکیلے نہیں جائیں گے انکے ساتھ عوام بھی ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق اپوزیشن اتحاد کی جانب ملک گھیر احتجاجی جلسوں کا اعلان کر دیا گیا ہے۔اسی پر تبصرہ کرتے ہوئے حفیظ اللہ نیازی کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نے جو ہاتھوں پر مہندی لگا رکھی تھی اس کا رنگ چڑا ہے یا نہیں لیکن انہوں نے یہ مہندی اب اتارنے کا فیصلہ کر لیا ہے، اور یہ چیز پاکستانیوں کے لیے اطمینان کا باعث بنے گی، اب اپوزیشن کو چاہیئے کہ پنجاب میں جلسوں کی قیادت مریم نواز کو کرنے دیں، سندھ میں بلاول بھٹو کو جبکہ خیبر پختونخوا اور بلوچستان میں یہ ذمہ داری مولانا فضل الرحمان کے ذمے لگا دینی چاہیئے،۔ حفیظ اللہ نیازی کا کہنا تھا کہ ہر سیاسی لیڈر کا اپنی ایک فین فالونگ ہے اپوزیشن نے اگر اپنے احتجاجی جلسوں کو کامیاب بنانے ہے تو پھر اختلافات بھلا کر سارے ایک ساتھ اسٹیج پر موجود ہوں کیونکہ جب ایک لیڈر اسٹیج سے اترتا ہے تو اسکی فالونگ بھی اسکے ساتھ ہی جلسہ گاہ کو چھوڑ دیتی ہے۔ اب عین ممکن ہے کہ جب اپوزیشن اپنا آخر جلسہ جو کہ 13 دسمبر کو لاہور میں ہونے والا ہے اس میں نواز شریف سب کچھ چھوڑ چھاڑ کر جلسے میں پہنچ جائیں اور پھر وہاں سے پاکستان ایک نئی سمت میں روانہ ہوگا۔

Back to top button