پاکستانفیچرڈ پوسٹ

خواجہ آصف پر غداری کا مقدمہ، منصوبہ ساز کردار سامنے آگئے‘ سابق ڈی جی ایف آئی اے نے کڑوا سچ بتا کر سب کو حیران کر دیا

مجھے کہا گیا خواجہ آصف کا کیس بہت عجیب تھا کہ وہ دبئی میں کسی کمپنی کے پاس نوکری کرتے ہیں اور پاکستان میں وزیردفاع ہیں: بشیر میمن

مسلم لیگ ن کے رہنماء خواجہ آصف پر غداری کا مقدمہ، منصوبہ ساز کردار سامنے آگئے ہیں اور سابق ڈی جی ایف آئی اے نے کڑوا سچ بتا کر سب کو حیران کر دیاہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن نے بتا یا کہ مجھے ایک میٹنگ میں بلا کر وزیراعظم نے کہاخواجہ آصف اسمبلی میں بہت زیادہ تقریریں کرتے ہیں ان کے خلاف ایکشن لیں۔تو میں نے جواب دیا کہ سر! اسمبلی کے اندر تقریر پر ایف آئی اے متحرک نہیں ہوتی،پھراٹھ کرکہتے ہیں تم خواجہ آصف سے اورمیاں نوازشریف سے بہت گھبراتیہو۔میں جو بات کررہا ہوں اس کے گواہ بھی موجود ہیں۔

صحافی مطیع اللہ جان سے خواجہ آصف کے کیس کے بارے میں بات کرتے ہوئے بشیر میمن نے بتایا کہ مجھے کہا گیا خواجہ آصف کا کیس بہت عجیب تھا کہ وہ دبئی میں کسی کمپنی کے پاس نوکری کرتے ہیں اور پاکستان میں وزیردفاع ہیں، ان کے خلاف غداری کا مقدمہ ہونا چاہیے، اس کیلئے شواہد چاہیے ہوتے ہیں، ثبوت کچھ نہیں تھا، یہ کابینہ نے اجازت دی تھی اور میں کابینہ کی میٹنگ میں گیا تھا، اس کے منٹس موجود ہیں، خواجہ آصف کیخلاف انکوائری بھی کی لیکن شواہد نہیں ملے۔ اقامہ کے بارے میں سوال پر بشیر میمن نے بتایا کہ اقامہ نہیں، وہاں سے شاید تنخواہ آرہی تھی یا آئی تھی، دوسال کا عرصہ ہوگیا ہے، اب پوری کہانی یاد نہیں۔

Back to top button