پاکستان

سندھ کے 2 جزائر سے متعلق صدرارتی آرڈیننس عدالت میں چیلنج

سندھ ہائی کورٹ میں صوبے کے 2 جزائر سے متعلق صدرارتی آرڈیننس کو چیلنج کر دیا گیا۔

سندھ ہائی کورٹ میں دائر کردہ درخواست کو سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے وفاقی اور صوبائی حکومت سمیت دیگر کو 23 اکتوبر تک کے لیے نوٹسز جاری کر دیے گئے۔ایڈووکیٹ شہاب اوستو نے درخواست میں مؤقف اختیار کیا کہ صدارتی آرڈیننس غیر آئینی اور غیرقانونی ہے۔گزشتہ روز پاکستان پیپلز پارٹی نے سندھ میں جزیروں کے حوالے سے صدارتی آرڈیننس کی منسوخی کے لیے قرارداد قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرائی تھی۔قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ پاکستان کے پانیوں اور حدود میں جزیروں کی ترقی اور منیجمنٹ کے لیے جاری صدارتی آرڈیننس نامنظور کیا جائے۔

Back to top button