پاکستان

نوازشریف جیل جانےکےلئےنکل پڑے،مخالفوں کی دوڑیں لگ گئیں

انہوں نےمیڈیا سےکہا کہ وہ اٹھے، اگر 2، 4 مہینےکیلئےجیل جانا بھی پڑے توچلےجائیںگے

سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہےکہ اب قوم نےاپنا فیصلہ صادرکرنا ہےاورجب قوم فیصلہ سنائےگی توسب فیصلےدھرے کےدھرے رہ جائیں گے۔ انہوں نےمیڈیا سےکہا کہ وہ اٹھے، اگر 2، 4 مہینےکیلئےجیل جانا بھی پڑے توچلےجائیںگے۔ لندن میں پاکستانی صحافیوں سے گفتگوکرتےہوئےسابق وزیراعظم نوازشریف نےخود کواشتہاری قراردینےاورڈھول پیٹنےکےحوالےسےکہا کہ جو کچھ ہورہا ہےکیا قوم اس سےاتفاق کرتی ہے؟ اب توقوم نےفیصلہ صادرکرنا ہے،سارے فیصلےدھرے کےدھرے رہ جائیں گے،قوم اپنا فیصلہ صادرکرکےرہےگی۔

میڈیا پرپابندیوں کےحوالےسےسابق وزیراعظم نوازشریف نےکہا کہ میڈیا پرکچھ توپابندیاں لگ رہی ہیں اورکچھ میڈیا خود اپنےآپ پرپابندیاں لگا رہا ہے۔ میڈیا بھی اٹھے،گھٹنےنہ ٹیکے،ہم تواٹھ گئےہیں، عوام کوبھی اٹھنےکیلئےکہا ہے، میڈیا بھی اٹھے، کیا ہوجائے گا اگر 2 سے 4 مہینے کیلئے جیل جانا بھی پڑ جائے، اس سے میڈیا ہمیشہ کیلئے آزاد ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ قوم کا مینڈیٹ چوری کرکے ظلم کیا گیا ہے، میرا ووٹ ان کے اور ان کا ووٹ میرے باکس میں ڈال دیا گیا، جیتا میں تھا ڈکلیئر ان کو کردیا گیا۔ جو میں باتیں کر رہا ہوں وہ ٹی وی پر دکھائی نہیں جاسکتیں، اگر بوجھ برداشت کرسکتے ہیں تو میں اور بھی باتیں کرسکتا ہوں۔

Back to top button