پاکستانفیچرڈ پوسٹ

اپوزیشن کی تحریک زور پکڑنے لگی، ایک ساتھ 130 استعفے تیار‘ حکومت کیلئے خطرے کی گھنٹی بج گئی، عمران خان سر پکڑ کر بیٹھ گئے

آئین اور قانون میں ضمنی انتخابات کرانے کی گنجائش موجود ہے لیکن حکومت اتنی زیادہ نشستوں پر انتخاب کرانے کی متحمل نہیں ہو سکتی

اپوزیشن کی تحریک زور پکڑنے لگی ہے اور ایک ساتھ 130استعفے تیار ہو گئے ہیں جس کے بعد حکومت کیلئے خطرناک کی گھنٹی بجنے سے عمران خان سر پکڑ کر بیٹھ گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن)کے مرکزی رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ استعفوں کا حتمی فیصلہ ہوچکا ہے،کب اورکیسے دینے ہیں یہ طے ہونا باقی ہے، جب 130 استعفے آئیں گے تو حکومت کیلئے نئے انتخابات کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہوگا،آئین اور قانون میں ضمنی انتخابات کرانے کی گنجائش موجود ہے لیکن حکومت اتنی زیادہ نشستوں پر انتخاب کرانے کی متحمل نہیں ہو سکتی۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن)کے 84 ممبرز ہیں اور اگر پیپلزپارٹی اور دیگر اتحادی جماعتوں کو بھی ملائیں تو130 ممبر بن جاتیہیں،جب 130 استعفے آئیں گے تو حکومت کیلئے نئے انتخابات کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہوگا۔پاکستان کی تاریخ میں پہلی بھی ہو چکا ہے جب 1971 میں عوامی لیگ نے ضمنی انتخاب کرایا تھا۔کیا پیپلزپارٹی استعفوں کے معاملے میں ساتھ دے گی؟ سوال کے جواب خواجہ آصف نے کہا کہ پیپلزپارٹی بھی اے پی سی کے فیصلوں میں شریک تھی اور وہ ان پر قائم رہے گی، استعفوں کا حتمی فیصلہ ہوچکا ہے لیکن یہ فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے کہ دینے کب ہیں۔خواجہ آصف نے مزید کہا کہ اپوزیشن کی تحریک اتنا زور پکڑے گی جو ہر چیز کو اپنے ساتھ بہا لے جائے گی۔

Back to top button