پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پی ٹی آئی وزراء کے لندن میں قائد ن لیگ نوازشریف سے رابطے‘ سابق وزیراعظم کی طرف سے کیا جواب ملا، تفصیلات منظر عام پر

تحریک اصاف کے کئی لوگوں نے نواز شریف سے رابطے کیے‘ایک درجن سے زائد وزرا کے ن لیگ لندن سیکرٹریٹ سے رابطے ہوئے ہیں

پی ٹی آئی وزراء کے لندن میں قائد مسلم لیگ ن میاں نوازشریف سے رابطوں کا انکشاف اور سابق وزیراعظم کی طرف سے کیا جواب ملا ہے تفصیلات منظر عام پر آگئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق حکمران جماعت تحریک انصاف کیلئے ایک ہلچل مچا دینے والی خبر سامنے آئی ہے۔ دعوی کیا جا رہا ہے کہ تحریک اں صاف کے کئی اراکین قومی اسمبلی اور وزرا بغاوت کرنے کیلئے تیار ہیں۔ اس حوالے سے نجی ٹی وی چینل سے وابستہ صحافی کا دعوی ہے کہ حکمران جماعت تحریک انصاف میں دراڑین پڑنا شروع ہو گئی ہیں۔ صحافی اظہر جاوید کا دعوی ہے کہ تحریک اصاف کے کئی لوگوں نے نواز شریف سے رابطے کیے ہیں۔ ایک درجن سے زائد تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی اور وزرا کے ن لیگ لندن سیکریٹریٹ سے رابطے ہوئے ہیں۔ تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی اور وزرا نواز شریف سے ملاقات کا وقت مانگ رہے ہیں۔

نواز شریف کی جانب سے ملاقات کیلئے ہاں کیے جانے کے بعد ملاقاتوں کو انتظام کیا جائے گا۔ جبکہ دوسری جانب حکومت کا دعوی ہے کہ ن لیگ کے بیشتر اراکین اسمبلی نواز شریف کے بیانیے سے سخت نالاں ہیں۔ درجنوں لیگی اراکین اسمبلی اور دیگر رہنما اپنی جماعت کو خیر باد کہنے پر غور کر رہے ہیں۔ جبکہ کچھ اراکین اسمبلی نے تو باقاعدہ نواز شریف کیخلاف بغاوت بھی کر دی ہے۔ ان اراکین اسمبلی میں جلیل شرقپوری اور دیگر شامل ہیں۔ جبکہ حکومت کے لوگوں کا دعوی ہے کہ آہستہ آہستہ ن لیگ کے بیشتر لوگ اپنے قائد نواز شریف کا ساتھ چھوڑ جائیں گے۔ ن لیگ کے کئی لوگوں کی رائے ہے کہ نواز شریف کا بیانیہ غلط ہے اور اس سے پارٹی کو نقصان پہنچے گا۔ یہ لوگ چاہتے ہیں کہ نواز شریف یا مریم نواز کی جگہ شہباز شریف پارٹی کے معاملات سنبھالیں۔

Back to top button