پاکستانفیچرڈ پوسٹ

گوجرانوالہ جلسہ، بھارتی میڈیا کس طرح پرموٹ کر رہا ہے؟جلسہ عمران خان کے خلاف نہیں بلکہ کسی اور کے خلاف ہے

بھارتی نیوز چینل سی این این نیوز 18کی طرف سے پی ڈی ایم کے جلسے اور احتجاجی تحریک کو پاکستان پر دباؤ سے تشبیہ دی گئی

بھارتی میڈیا کی طرف سے اپوزیشن کی جانب سے ہونے والے جلسے جلسوں کو وزیراعظم عمران خان اور فوج کے خلاف احتجاج کہہ کر تبصرہ کیا جاتا رہا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی نیوز چینل سی این این نیوز 18کی طرف سے پی ڈی ایم کے جلسے اور احتجاجی تحریک کو پاکستان پر دباؤ سے تشبیہ دی گئی، اوراس احتجاج کو ناصرف وزیراعظم عمران خان بلکہ فوج مخالف ریلی بناکر پیش کیا گیا، اس کے ساتھ ساتھ یہ بھی دعوی کیا گیا کہ بلوچستان، سندھ اور گلگت بلتستان کے بعد اب پنجاب بھی مختلف سیاسی گروہوں کی وجہ سے دبامیں آچکے ہیں۔بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ آج گوجرانوالہ میں ہونے والے جلسے میں مختلف سیاسی جماعتوں کے کارکن شریک ہوں گے، جب کہ ان کی وجہ سے پاکستان سول نافرمانی کی طرف بڑھ رہا ہے۔ دوسری طرف بتایا گیا ہے کہ مریم نواز اور مولانا فضل الرحمن کچھ ہی دیر میں گجرانوالہ جلسے کے لیے روانہ ہوں گے، اس سلسلے میں اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ ک گوجرانوالہ میں بڑے جلسے سے قبل مولانا فضل الرحمان کے گھر چھوٹی بیٹھک ہوئی،اجلاس میں پی ڈی ایم کی صوبائی تنظیم سازی اور عہدوں پر کوئی فیصلہ نہ ہوسکا، ذرائع کے مطابق ہر جماعت صوبوں میں مرکزی عہدوں پر اپنا بندہ دیکھنا چاہتی ہے، سربراہ جے یو آئی ف مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پر ہونیوالے اجلاس میں صرف چار رہنماوں نے شرکت کی۔دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز گوجرانوالہ جلسہ میں شریک ہونے کے لیے روانہ ہو گئی ہیں، مریم نواز قافلے کی صورت میں گوجرانوالہ کے لیے روانہ ہوئیں ہیں،جب کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما محمد زبیر بھی ان کے ہمراہ موجود ہیں۔اس موقع پر انہوں نے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 22 کروڑ عوام کے حقوق کے لیے نکلے ہیں۔گوجرانوالہ عوام سے امید کرتی ہوں کہ وہ آج باہر نکلیں گے۔ووٹ کی عزت کے لیے نکلے ہیں۔مائیں بہنیں آئیں اور اس قافلے میں شامل ہوں۔مریم نوا زنے پولیس انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ ہمارے راستے میں نہ آئیں۔انہوں نے کہا کہ پولیس اور بیوروکریسی کو بھی مشکلات کا سامنا ہے۔یہ صرف عوام کے حقوق کی نہیں بلکہ آپ کی بھی جنگ ہے۔آپ نے آئین اورقانون کی قسم کھائی ہے، کسی جعلی جماعت کے حقوق کی قسم نہیں کھائی۔قانون کی اس جنگ میں ہمارے ساتھ شامل ہوں۔اس موقع پر مریم نواز نے کارکنوں زندہ باد کا نعرہ بھی لگایا۔انہوں نے کہا کہ آج کے جلسے سے حکومت کے خاتمے کی شروعات ہو چکی ہیں، سلیکٹڈ حکومت کو گھر بھیج کر دم لیں گے۔ واضح رہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدرمریم نواز نماز جمعہ کے بعد جاتی عمرہ سے جلسہ گاہ کیلئے روانہ ہوئی ہیں ذرائع (ن)لیگ کے مطابق مریم نوازکا قافلہ بابو صابو انٹرچینج سے ہوتا ہوا شاہدرہ چوک پہنچے گا اور کامونکی کے قریب مولانا فضل الرحمان کے قافلے سے ملے گااس حوالے سے ن لیگ کے سینیٹر پرویز رشید نے کہا کہ ملک بھر سے کارکنوں کے قافلے جاتی عمرہ پہنچیں گے، کارکن اپنے طور پر سیدھا گوجرانوالا بھی جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت مستعفی نہ ہوئی تو اسے مزید عوامی احتجاج کا سامنا کرنا ہو گا، حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں، عوام مہنگائی، بے روزگاری، لاقانونیت پر غم و غصے میں ہے،عوام موجودہ حکومت سے تنگ آ چکے ہیں۔

Back to top button