پاکستان

مولانا طاہر اشرفی نے حکومت سے حیران کن مطالبہ کر دیا

ملک کے حالات منظم سازش کے ذریعے خراب کیے جارہے ہیں،امید ہے جلد مولانا عادل کے قاتل انجام کو پہنچیں گے

چیئرمین پاکستان علماء کونسل مولانا طاہر اشرفی نے حکومت سے حیران کن مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ حالات کے پیش نظر تمام جید علماء کو سکیورٹی فراہم کی جائے ۔

چیئرمین پاکستان علما کونسل مولانا طاہر اشرفی نے کہا کہ کراچی میں 4 سے 5 بڑی مذہبی شخصیات ہیں جنہیں سکیورٹی ملنی چاہیے، ملک کے حالات منظم سازش کے ذریعے خراب کیے جارہے ہیں،امید ہے جلد مولانا عادل کے قاتل انجام کو پہنچیں گے۔ کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ جو لوگ ملک میں فرقہ واریت کو ہوا دینا چاہتے ہیں وہ اسلام کے دشمن ہیں۔ سازشی عناصر پاک فوج اور عوام کے درمیان دوریاں پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت پاکستان میں فرقہ وارانہ کشیدگی کو فروغ دینے میں ملوث ہے۔

علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ مولانا عادل کا قتل عالم اسلام کے لیے سانحہ ہے صحابہ کی توہین اور تکفیر کے مرتکب بیشتر افراد گرفتار کیے جاچکے ہیں، تمام مسالک کے علما کا متفقہ پیغامِ پاکستان ملک میں انتہا پسندی کے خاتمے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ مولانا عادل کو سیکیورٹی فراہم نہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔ تمام جید علما اکرام کی سیکیورٹی پر خصوصی توجہ دی جائے۔

Back to top button