پاکستانفیچرڈ پوسٹ

مولانا فضل الرحمن نے جلسوں کے بعد حکومت گرانے کا ایک اور منصوبہ تیار کرلیا‘ اگلا قدم کیا اٹھانے والے ہیں، وزیراعظم عمران خان بڑی پریشان میں مبتلا

ملک میں کوئی حکومت نہیں انتظامی ڈھانچہ بکھرا ہوا، نیب کو برداشت نہیں کیا جا سکتا، ہم جیلوں کی طرف رخ موڑنے کو تیار ہیں

جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے جلسوں کے بعد حکومت گرانے کا ایک اور منصوبہ تیار کرلیا ہے جس کے بعد عمران خان کی پریشان میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ڈی ایم اور جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ پورے ملک میں اضطراب اور بے چینی کی صورتحال ہے۔ لاڑکانہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ملک میں کوئی حکومت نہیں انتظامی ڈھانچہ بکھرا ہوا ہے، صورتحال ایسی نہیں کہ نیب کو برداشت کیا جا سکے، ہم جیلوں کی طرف رخ موڑنے کو تیار ہیں۔ مولانا فضل الرحمان کا مزید کہنا تھا کہ سندھ پولیس کا ردعمل اس بات کی نشاندہی ہے کہ پانی سر سے گزر گیا،کراچی واقعہ کا جنہیں ذمہ دار قرار دیا جا رہا ہے، انکوائری بھی وہی کریں گے، ایسا نہیں ہوتا،سندھ میں جو کچھ ہوا کراچی میں اسکو انڈیا پر کیوں نہیں ڈالتے، اگر ہمیں سیکورٹی نہیں دے سکتے تو ہمیں اجازت دین سیکورٹی کی، ہم انتظام کرلیں گے۔ مولانا فضل الرحمان کا مزید کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم پر تمام جماعتیں ساتھ ہیں،اداروں کی حکومتی معاملات میں مداخلت نہیں ہونی چاہیے پاکستان کی بقا کی لڑائی ہے، اس میں تمام طبقے شریک ہیں، پی ڈی ایم اتحاد دوبارہ الیکشن کرانے کیلئے ہے۔ مولانا فضل الرحمان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کی بقا کی لڑائی،تمام طبقے شامل ہیں،صوبائی اختیارات میں مداخلت نہیں ہونی چاہئے،سندھ پولیس کاردعمل گواہی دے رہا ذمہ داری کس پر تھی، حکمرانوں کو عوام کی چیخ و پکار سنائی نہیں دے رہی،غیر اعلانیہ مارشل لا کے خلاف جدوجہد جاری رہے گی۔

Back to top button