پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ہاں میں غدار ہوں‘ کیا عوامی مہم کا آغاز ہونے والا ہے؟صحافی حامد میر نے غداری کے سرٹیفکیٹ پر تشویش کا ظاہر کر دی

2020 میں ایک اور ایک مل کر گیارہ ہو چکے ہیں۔ پتا نہیں آج کا شیخ مجیب الرحمن اور جنرل یحیی خان کون ہے

سینئر صحافی حامد میر نے کہا ہے کہ مجھے اس بات پر شدید تشویش لاحق ہے کہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ کی احتجاجی تحریک کے نتیجہ میں ملک گیر احتجاج ہوگا اور کوئی کہتا پھیرے گا کہ ہاں میں غدار ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میں تو صرف ایک لیڈر شیخ مجیب الرحمن اور اس کی جماعت عوامی لیگ کو غدار قرار دیا جاتا تھا، 2020 میں ایک اور ایک مل کر گیارہ ہو چکے ہیں۔ پتا نہیں آج کا شیخ مجیب الرحمن اور جنرل یحیی خان کون ہے لیکن اگر حکومتی ترجمانوں کو درست تسلیم کر لیا جائے تو پاکستان میں گندم، چاول اور چینی کی کمی اور غداروں کی افراط ہو چکی ہے بلکہ غدار پیدا کرنے میں پاکستان خود کفیل ہو چکا ہے۔ ریاستِ پاکستان تحسین کی مستحق ہیکہ مہنگائی کے اِس دور میں غداری کا سرٹیفکیٹ بہت سستا کر دیا گیا ہے۔ بس آپ نواز شریف کی تقریر سن لیں یا کسی کو سنا دیں تو آپ کو غداری کا سرٹیفکیٹ بغیر مانگے ہی مل جائے گا بلکہ آپ کی جیب میں ٹھونس دیا جائے گا اور اگر جیب نہ ملے تو ایف آئی اے والے آپ کا فون نمبر ڈھونڈ کر واٹس ایپ پر کسی نوٹس کی شکل میں ملک دشمنی کا الزام آپ کی خدمت میں پیش کر کے اپنے سیاسی آقاؤں کو خوش کرتے نظر آئیں گے۔

Back to top button