پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پی ڈی ایم کا جلسہ لاہور کامیاب اور فیصلہ کن بنانے کے لئے مسلم لیگ ن کو بڑا ٹاسک مل گیا ، حکومتی صفوں میں زبردست ہلچل نے ہلا کر رکھ دیا

ن لیگ نے انتظامی معاملات کے لئے 18 کمیٹیاں تشکیل دے دیں جبکہ اراکان اسمبلی اور پارٹی عہدیداروں سے فنڈز بھی مانگ لیے

پی ڈی ایم نے لاہور کے جلسے کو حکومت کے خلاف فیصلہ کن بنانے کے لیے تیاریاں زور وشور سے شروع کردیں جبکہ ن لیگ کو بڑا ٹاسک مل گیا ہے جس سے حکومتی صفوں میں ہلچل مچ گئی ہے۔

کھوج نیوز ذرائع کے مطابق پی ڈی ایم کا لاہور جلسہ کو کامیاب بنانے کے لئے ن لیگ کی جانب سے انتظامی اور مالی معاملات کے لیے 18 کمیٹیاں تشکیل دے دی گئیں،پارٹی نے لاہور کے ارکان اسمبلی اور پارٹی کے عہدیداروں سے فنڈز بھی مانگ لئے۔ ذرائع کے مطابق رکن قومی اسمبلی سے 5 لاکھ جبکہ ارکان صوبائی اسمبلی سے 3لاکھ فی کس وصول کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ لاہور ڈویژن کے عہدیداروں سے بھی جلسہ کیلئے فنڈز وصول کئے جائیں گے ، ن لیگی ذرائع کے مطابق پارٹی کی جانب سے فنڈز نہ دینے والوں کا نوٹس بھی لیا جائے گا ،جلسے کو مثالی بنانے کیلئے مریم نواز لاہور کے مختلف حلقوں کا دورہ بھی کریں گی، تمام کمیٹیوں کی رپورٹ روزانہ کی بنیاد پر ہر کمیٹی کے سربراہ سے لی جائے گی۔سپر ویژن اور کوآرڈینیشن کمیٹی رانا ثنا اللہ کی سربراہی میں بنائی گئی ۔اس میں ایاز صادق ،سعد رفیق مریم اورنگ زیب اور عطا اللہ تارڑ شامل ہیں، سینٹرل ڈسٹرکٹ کمیٹی پرویز ملک کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں سیف الملوک کھوکھر،خواجہ عمران نذیراور لاہور کے تمام ممبران قومی و صوبائی اسمبلی اور لاہور ڈویژن کے پارٹی عہدیدار شامل ہیں۔تیسری لیگل کمیٹی رانا ظفر اقبال کی سربراہی میں بنائی گئی جس کے ممبرز رانا ثنا اللہ فائنل کریں گے ، چوتھی مینارٹیز کمیٹی کامران مائیکل کی سربراہی میں بنائی گئی اس میں رمیش سنگھ اروڑا، خلیل طاہر سندھو اور طارق گل شامل ہیں،پانچویں انتظامی کمیٹی رانا مقبول کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں خواجہ عمران نذیر ، امتیاز الہی ایڈووکیٹ اور سمیع اللہ خان شامل ہیں۔ چھٹی فنانس اور جلسہ کمیٹی رانا مبشر کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس میں غزالی سلیم بٹ ، رمضان صدیق بھٹی اور خواجہ سلمان رفیق شامل ہیں،ساتویں پنڈال کوآرڈینیشن کمیٹی ملک ریاض کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس میں بلال یاسین، سمیع اللہ خان ، میاں مجتبی شجاع اور میاں مرغوب شامل ہیں ،آٹھویں پبلسٹی کمیٹی بھی ملک ریاض کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں حافظ نعمان، وقار صدیق بھٹی،مہر محمود اور صلاح الدین پپی شامل ہیں۔ 9 ویں ٹرانسپورٹ کمیٹی چودھری شہباز ایم پی اے کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس میں رمضان صدیق بھٹی ، مہر اشتیاق اور سواتی خان شامل ہیں ،دسویں پبلیکیشن اینڈ پرنٹنگ کمیٹی پرویز رشید کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس کے ممبرز رانا ثنا اللہ بعد میں فائنل کریں گے ، 11 ویں عوامی رابطہ کمیٹی رانا مشہود احمد خان کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں میاں نصیر اور کرنل مبشر جاوید شامل ہیں، 12 ویں میڈیا کمیٹی عظمی بخاری کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس میں بدر شہبازعامر خان عمران گورائیہ شامل ہیں،تیرھویں لیڈیز کمیٹی شائستہ پرویز ملک کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں صبا صادق، کنول لیاقت اور لاہور سے تمام خواتین ارکان قومی و صوبائی اسمبلی شامل ہیں،14 ویں ٹریڈرز ونگ کمیٹی میاں مرغوب کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں حاجی حنیف،میاں عثمان،سہیل بٹ اور عامر صدیق شامل ہیں،پندرھویں سٹوڈنٹس کوآرڈینیشن کمیٹی رانامشہود کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس میں رانا ارشد شامل ہیں،سولہویں پروفیشنل کمیٹی سائرہ افتخار کی سربراہی میں بنائی گئی ہے جس میں سعدیہ تیمور اور کنول نعمان شامل ہیں ۔ 17 ویں ریپڈ ریسپانس کمیٹی خرم روحیل اصغر کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں رفاقت ڈوگر ایڈووکیٹ فیصل سیف الملوک کھوکھر شامل ہیں ، 18 ویں موبلائزیشن کمیٹی طلال چودھری کی سربراہی میں بنائی گئی جس میں دانیال عزیز،سائرہ افضل تارڑ مصدق ملک ، محمد زبیر،محسن شاہنواز رانجھامیاں جاوید لطیف اور طارق فیصل شامل ہیں۔

Back to top button