پاکستان

حکومت بڑا قدم، سرکاری سکولوں میں مفت کھانا پہنچانے کا اعلان

بچوں میں غذائی قلت کو دور کرنے کیلئے پرائمری سکول کے بچوں کو مفت دوپہر کا کھانا فراہم کرنے کے لئے منصوبے کا آغاز ہو گیا ہے

حکومت نے بڑا قدم اٹھاتے ہوئے محکمہ تعلیم پنجاب نے طلباء کے لیے سرکاری سکولوں میں مفت لنچ فراہم کرنے کے منصوبے کا آغاز کر دیاہے۔

صوبائی وزیر تعلیم مراد راس نے کا کہنا ہے کہ پنجاب کے محکمہ سکول ایجوکیشن نے پرائمری کے طلبہ و طالبات کو دوپہر کا لنچ سکول میں ہی مفت دینے کا فیصلہ کیا ہے، اس منصوبے کے لئے حکومت کو اللہ والے ٹرسٹ کا تعاون حاصل ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ پنجاب کے تمام پرائمری سکولوں کے طلبہ کو اس منصوبے کے تحت دوپہر کا کھانا مفت دیا جائے گا، انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں مزید کہا کہ ابتدائی طور پر اس منصوبے کو پنجاب کے سو سکولوں سے شروع کیا جائے گا۔

قبل ازیں وفاقی حکومت نے آئندہ سال سے پرائمری اسکول کے طلبا و طالبات کو وسیلہ تعلیم کے تحت سہ ماہی وظیفہ دینے کا اعلان کیا ہے۔وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے بتایاکہ منصوبے کے تحت ہر تین ماہ بعد لڑکیوں کو 2000 روپے اور لڑکوں کو 1500 روپے دیے جائیں گئے۔انہوں نے کہا کہ احساس گریجویٹ پورٹل 30 نومبر 2020 تک کھلا ہے جس پر اہل طلبہ آن لائن درخواست دے سکتے ہیں۔طلبا یہ خبر سن کر بہت خوش ہیں ان کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم کی جانب سے یہ بہت بڑا اقدام ہے۔اس وظیفے سے ہم اپنی تعلیم کو جاری رکھ سکیں گے جو بعض اوقات میسے نہ ہونے کی وجہ سے رک جاتی ہے۔ایسے اور بھی بہت سے اچھے اقدامات حکومت کو اٹھانا چاہئیں۔

Back to top button