پاکستان

آئی جی سندھ کےاغواکا معاملہ،آرمی چیف نےدبنگ فیصلہ سنادیا

آئی جی سندھ سےمتعلق واقعہ کےذمہ داروں کوعہدوں سےہٹانےکا فیصلہ کیا گیا ہے

پاک فوج کےشعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کےمطابق چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ کی ہدایت پرکراچی واقعہ سےمتعلق کورٹ آف انکوائری کمیٹی کی رپورٹ جاری کردی گئی ہےجس کےتحت واقعہ کےذمہ داروں کوعہدوں سےہٹانےکا فیصلہ کیا گیا ہےجب کہ ذمہ دارافسران کو جی ایچ کیورپورٹ کرنےکی ہدایت کی گئی ہے۔ گزشتہ مہینےرہنما مسلم لیگ (ن) مریم نوازاوران کےشوہرکیپٹن(ر) صفدرحکومت مخالف اتحاد پی ڈی ایم کےجلسےمیں شرکت کےلیے کراچی پہنچےتھے،جلسےسےقبل لیگی قیادت مزارقائد پرحاضری کےلیےپہنچی جہاں کیپٹن (ر) محمد صفدرنےنعرے بازی شروع کردی تھی اورمزارقائد کےاحاطےمیں ”ووٹ کوعزت دو“ کےنعرے لگائے۔

واقعہ کےبعد پاکستان تحریک انصاف کےرہنما وفاقی وزیربحری امورعلی زیدی نےآئی جی سندھ اورچیف سیکریٹری سندھ کووارننگ دیتے ہوئےکہا کہ اگرصبح تک مقدمہ درج نہیں ہوا توکابینہ اجلاس میں اوایس ڈی بنانےکا معاملہ اٹھاؤں گا۔ واقعہ کےاگلےروزکیپٹن ریٹائرڈ صفدر صبح کراچی میں نجی ہوٹل کےکمرے سےگرفتار کرلیا گیا۔ مریم نوازنےاپنی ٹوئٹ سےبتایا تھا کہ کراچی میں پولیس نےہوٹل میں ہمارے کمرے کا دروازہ توڑکرکیپٹن (ر) صفدرکوگرفتارکیا۔ انہوں نےہوٹل کےکمرے کی ویڈیوشیئرکرتےہوئےبتایا کہ جب پولیس اہلکارزبردستی اندر گھسےتووہ کمرے میں موجود تھیں اورسورہی تھیں۔

Back to top button