پاکستان

آئی جی سندھ کے اغواء کاروں کی معطلی کا فیصلہ آنے کے بعدصحافی سہیل وڑائچ نے حقیقت سامنے لانے کا کریڈٹ کس کو دے دیا؟

تمام کریڈٹ آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کو جاتا ہے کیونکہ انہوں نے اس کا لینڈ مارک فیصلہ ہے، آرمی چیف نے انتہائی منصفانہ فیصلہ کیا

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے آئی جی سندھ واقعے میں ملوث سندھ رینجرز اور انٹرسروسز انٹیلی جنس ایجنسی (آئی ایس آئی)کے افسران کو معطل کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کورٹ آف انکوائری کی سفارشات آنے کے بعد متعلقہ افسران کو ذمہ داریوں سے ہٹا دیا گیاہے جس پر سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے تجزیہ کرتے ہوئے اس تمام چیز کا کریڈٹ آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کو دیتے ہوئے کہا کہ یہ لینڈ مارک فیصلہ ہے، آرمی چیف نے انتہائی منصفانہ فیصلہ کیا اور اس سے ان کاوقاربلند ہواہے، جو تاثر تھا کہ اپوزیشن کے ساتھ کچھ بھی ہوجائے کوئی بھی سننے والا نہیں ہے، اس تاثر کی نفی ہوئی ہے، بلاول کو سیاسی فائدہ ہواہے، سب سے زیادہ کریڈٹ جنرل باجوہ کو جائے گا جنہوں نے یہ فیصلہ کیا ہے، انہوں نے یہ نہیں دیکھا کہ وہ جس ادارے کی سربراہی کرتے ہیں اس کے کسی بندے پر ضر پڑتی ہے، انہوں نے انصاف سے کام لیاہے، انہیں اگر یہ نظر آیاہے تو فوج کے اندر کچھ لوگوں کی غلطی تھی انہوں نے اس کو بھی پوائنٹ آوٹ کیا ہے اور اس پر تادیب بھی ضرورکریں گے۔

متعلقہ خبریں