پاکستان

شادی میں جانے کے خواہش مند موت کے منہ میں چلے گئے؛22 افراد پانی میں ڈوب کر جاں بحق

شادی کی تقریب میں شرکت کے لیے جانے والے خواتین اور بچے پانی میں ڈوب کر جاں بحق ہوگئے۔

دو روز قبل ڈیرہ اسماعیل خان کی تحصیل پروآ کے علاقے شاہ اجمل کے رہائشی 14 بچے اور 8 خواتین شادی کی تقریب میں شرکت کے لیے رکشہ پر سوار ہوکر روانہ ہوئے لیکن افسوسناک حادثے کے باعث تمام افراد موت کے منہ میں چلے گئے۔

28 بچے اور خواتین کو لے کر چنگ چی لوڈر رکشہ چڑھائی نہ چڑھ سکا اور پل سے الٹ گیا جس کے نتیجے میں 22 افراد پانی میں ڈوب کر جان سے چلے گئے۔ریسکیو ادارے 3 روز تک میتیں نکالتے رہے اور گاؤں میں دفنانے کا عمل جاری رہا۔حادثے کے نتیجے میں ایک گھر پر قیامت ٹوٹ پڑی کیونکہ اس افسوسناک حادثے میں اس گھر کے 9 افراد جان سے چلے گئے۔

لواحقین کا کہنا ہے کہ ڈرائیور محمد حسین پر تو دعویداری نہیں کی گئی مگر اب تک حکومت، ریاست اور معاشرہ، کسی نے بھی تو کوئی سوال نہیں اٹھایا ہے کہ ایک چنگ چی لوڈر پر 28 سواریاں کس کی اجازت سے اٹھائی گئی تھیں۔

Back to top button