پاکستان

چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ کی موت کا ذمہ دار کون؟ ایسا نام سامنے آگیا کہ پورا ملک لرز اٹھا، ہر طرف سنسنی پھیل گئی

ان کی موت کا الزام بھی پاکستان کی فوج پر ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے، کہا جارہا ہے کہ جسٹس وقار سیٹھ کی موت کے پیچھے کوئی فال پلے ہے

چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ کی موت کا ذمہ دار کون ہے ایسا نام سامنے آگیا کہ پورا ملک لرز اٹھا اور ہر طرف سنسنی پھیل گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق تجزیہ کار سمیع ابراہیم نے انکشاف کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر دیکھا جائے تو اس میں ایک مخصوص میڈیا گروپ کے لوگ فعال نظر آتے ہیں ، جن کی طرف سے پروپیگنڈہ کیا جارہا ہے کہ چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ علاج کے لیے سرکاری ہسپتال کیوں نہیں گئے؟ وینٹی لیٹر پر کیا ہوا اس کی تحقیقات ہونی چاہئیں، یہاں تک بھی کہا جارہا ہے کہ ان کا پوسٹ مارٹم کروایا جائے یعنی ان کی موت کا الزام بھی پاکستان کی فوج پر ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے، کہا جارہا ہے کہ جسٹس وقار سیٹھ کی موت کے پیچھے کوئی فال پلے ہے۔

اینکر پرسن و تجزیہ کار سمیع ابراہیم نے مزید کہا کہ اس پروپیگنڈے میں ایک مخصوص میڈیا گروپ کے لوگ ملوث ہیں ، اس مقصد کے لیے سوشل میڈیا پر ہر15,20 پوسٹوں کے بعد کوئی نا کوئی متنازع پوسٹ شیئر کی جارہی ہے ، جن میں یہ تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے کہ جسٹس وقار احمد کو ماردیا گیا یہ کورونا کے مریض تھے لیکن ان کا علاج ٹھیک نہیں کیا گیا اور انہیں کچھ نہ کچھ دے کر ماردیا گیا کیوں کہ انہوں نے یہ درخواست دی ہوئی تھی کہ اب انہیں بطور سپریم کورٹ جج تعینات کیا جائے لیکن وہ لوگ انہیں سپریم کورٹ میں لانا نہیں چاہتے تھے اس لیے انہیں جان سے ہی مار دیا گیا۔

سمیع ابراہیم کے مطابق یہاں تک بھی کہا جارہا ہے کہ اب کہیں جسٹس قاضی فائز عیسی کو بھی کورونا نہ ہوجائے ، ایسا پروپیگنڈہ کرنا کہ شاید جسٹس وقار احمد سیٹھ کو مبینہ طور پر قتل کردیا گیا ہے، ان کے خاندان کے لیے کتنی تکلیف کا باعث ہوگا کیوں کہ ایسا کرنے والے اپنے جھوٹے مقاصد کے لیے اس طرح کی سازشیں کر رہے ہیں ، ایسی باتیں اس منصوبے کا حصہ ہے جس کے تحت پاکستان کی فوج کے بارے میں نفرت پھیلائی جارہی ہے۔

Back to top button