پاکستان

ایف اے ٹی ایف نے عمران خان حکومت کوپھر گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کردیا‘ اب پاکستانیوں کو کس کام سے روک دیا گیا، ہلچل مچا دینے والی رپورٹ

ایف اے ٹی ایف نے نئے سیونگ اکاؤنٹس کھولنے کے ساتھ ساتھ نئے سیونگ سرٹیفیکیٹس کی فروخت پر بھی پابندی لگائی دی ہے

ایف اے ٹی ایف نے ایک بار پھر عمران خان حکومت کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ہے جس کے بعد ایف اے ٹی ایف کی نئی شرائط پر عمل کرتے ہوئے نئے سوینگ اکاؤنٹس کھولنے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نئے سیونگ اکاؤنٹس کھولنے کے ساتھ ساتھ نئے سیونگ سرٹیفیکیٹس کی فروخت پر بھی پابندی لگائی گئی ہے جس کا اطلاق رواں ماہ 16 نومبر سے ہوگا، اس سلسلے میں باقاعدہ نوٹی فکیشن جاری کر دیا گیا ہے تاہم پرانے اکانٹس اس پابندی سے مستثں ی ہیں اور وہ بدستور چلتے رہیں گے۔ بتایا گیا ہے کہ سیونگ اکانٹس سے متعلق پابندی ان کی مکمل کمپیوٹرائزیشن تک برقرار رہے گی کیوں کہ ملک بھر کے جی پی اوز اور ڈاک خانوں کی پاکستان اسٹیٹ بینک کے ساتھ آن لائن کمپیوٹرائزیشن شروع کر دی گئی ہے، حکومت کی طرف سے شروع کیے گئے اس اقدام کا بنیادی مقصد ملک بھر کے ڈاک خانوں کے ذریعے سے ہونے والی ترسیل زر کا مکمل کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ رکھنا ہے۔ دوسری طرف پاکستان کو بلیک لسٹ میں دھکیلنے کی بھارتی سازش ناکام ہوگئی ایف اے ٹی ایف نے فیصلہ سنا دیا، پاکستان نے تمام ایکشن پوائنٹس پر پیش رفت دکھائی ہے، نام گرے لسٹ میں برقرار رکھا جائے گا۔

متعلقہ خبریں