پاکستان

این آر او دینے کا اختیار عمران خان کے پاس ہرگز نہیں بلکہ وہ تو فلاں فلاں’ شاہد خاقان عباسی نے وزیراعظم کی بولتی بند کر دی

وزیراعظم ان سے پوچھیں جن کو انہوں نے این آر او دیا، میرے مقدمات کی سماعت کے دوران کیمرے لگائے جائیں

مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہاہے کہ این آر او کااختیار آمر کے پاس ہوتا ہے وزیراعظم کے پاس نہیں ،مجھے کوئی این آر او نہیں چاہئے ۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ آج ہماراسرکلر ڈیبٹ ایک ہزار ارب سے بڑھ چکا ہے، آج ملک کو ضرورت ہے،ڈھائی سال میں کوئی ایل این جی ٹرمینل نہیں لگ سکا،پاکستان کے انرجی مسائل کاحل اضافی گیس میں ہے۔ انہوں نے کہاکہ پاور سیکٹر سرکلرڈیبٹ2018 میں 1050 ارب تھا،ہم سستے ترین بجلی پلانٹ لگا کر گئے تھے،گیس کی قیمت 2 سے 3 گنابڑھی ہے، حکومت کیوں اضافی گیس لانے سے قاصر ہے،گیس سرکلر ڈیبٹ1000 ارب سے بڑھ چکا ہے ، انرجی مسائل صرف ایل این جی سے ہی حل ہوں گے۔ لیگی رہنما نے کہاکہ این آر او کااختیار آمر کے پاس ہوتا ہے وزیراعظم کے پاس نہیں ،وزیراعظم ان سے پوچھیں جن کو انہوں نے این آر او دیا، میرے مقدمات کی سماعت کے دوران کیمرے لگائے جائیں ۔

متعلقہ خبریں