پاکستانفیچرڈ پوسٹ

شہباز شریف اور مریم نواز میں صلح کس نے کروائی، کیا معاملات طے پائے؟ سینئر صحافی عارف حمید بھٹی اندرونی کہانی سامنے لے آئے

شہباز شریف نے کہا مریم نہیں، میں مسلم لیگ ن کا صدر ہوں اور بحیثیت صدر میں نے لیگی ارکان اسمبلی کے استعفوں کا فیصلہ نہیں کیا

سینئر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے شہباز شریف اور مریم نواز کے درمیان صلح کس نے کروائی اور کیا معاملات طے پائے اس حوالے اندرونی کہانی سامنے لے آئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے کہا کہ شہباز شریف نیشنل ڈائیلاگ کے لیے تیار ہیں اور اپوزیشن کی تقریبا صلح ہو چکی ہے۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ مسلم لیگ فنکشنل کے رہنما احمد خان درانی جیل میں شہباز شریف سے ملے اور انہیں پیر پگارا کا پیغام پہنچایا۔ جس کے بعد اب شہباز شریف نیشنل ڈائیلاگ اور سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے کے لیے راضی ہو گئے ہیں۔ صحافی عارف حمید بھٹی نے کہا کہ شہباز شریف نے کہا مریم نہیں، میں مسلم لیگ ن کا صدر ہوں اور بحیثیت صدر میں نے لیگی ارکان اسمبلی کے استعفوں کا فیصلہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ مریم نواز جوش خطابت میں جو تقریر کرتی ہیں وہ کریں، ابھی تک کوئی ایک بیان ایسا بتا دیں جو میں نے فوج کے خلاف دیا ہو۔ ایک بیان بھی میں نے اسٹیبلشمنٹ کے خلاف نہیں دیا۔ ملاقات کے دوران شہباز شریف نے اپنے صاحبزادے حمزہ شہباز کی گرفتاری کا شکوہ کیا اور یہ بھی کہا کہ حمزہ شہباز کو ناحق جیل میں رکھا گیا۔ شہباز شریف نے کہا ہے کہ آپ بات چلائیں، مسلم لیگ ن سینیٹ انتخابات میں بھی حصہ لے گی۔

متعلقہ خبریں