پاکستانفیچرڈ پوسٹ

جمعیت علماء اسلام (ف) اور پیپلز پارٹی کے درمیان اختلافات کتنی شدت اختیار کر گئے؟ اندرونی کہانی سامنے آنے کے بعد تہلکہ مچ گیا

جے یو آئی (ف) اور پیپلز پارٹی کے درمیان اختلافات کی خبریں سامنے آرہی ہیں لیکن اس معاملے کی جمعیت علماء اسلام نے تردید کر دی ہے

جمعیت علماء اسلام (ف) اور پیپلز پارٹی کے درمیان اختلافات کتنی شدت اختیار کر گئے ہیں اس حوالے سے اندرونی کہانی سامنے آنے کے بعد تہلکہ مچ گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جمعیت علمائے اسلام (ف)اور پیپلز پارٹی کے درمیان اختلاف کی خبریں سامنے آرہی ہیں۔ لیکن اس معاملے میں جمعیت علمائے اسلام نے تردید کردی ہے۔ یاد رہے کہ چند روز قبل جے یوآئی لاڑکانہ اور ڈپٹی کمشنر کے درمیان تنازع پیدا ہوا تھا۔ امیر جے یوآئی لاڑکانہ نے کہا کہ ڈی سی لاڑکانہ نے جے یوآئی کے پینا فلیکسزز اور پرچم شہر بھر سے اتروادئیے تھے۔ چنانچہ پینا فلیکسزز اتارنے کے معاملہ پر جے یوآئی لاڑکانہ نے ڈی سی کے معطلی کا مطالبہ کیا تھا۔ جے یوآئی نے لاڑکانہ میں بھرپور مظاہرہ کی بھی کال دی تھی،جے یوآئی کی احتجاجی کال کے بعد ڈی سی لاڑکانہ اپنے والد کے ہمراہ جے یوآئی کے آفس آکر معذرت کی، ڈی سی کی معذرت کے بعد جے یوآئی لاڑکانہ نے معاملہ کو ختم کردیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ بینظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر چند چینلز اس طرح کی خبریں پھیلاکر پی ڈی ایم کے اتحاد کو کمزور کر رہے ہیں بینظیر بھٹو کی برسی میں جے یوآئی کا اعلی سطحی وفد شریک ہورہا ہے۔جے یوآئی کوئی دھرنا نہیں دے رہی اور نا ہی کوئی احتجاج کر رہی ہے۔

متعلقہ خبریں