پاکستان

"تھر میں گھر گھر موت کا رقص”۔۔۔ ایک سال میں 800 بچے جان کی بازی ہار گئے

سندھ کے ضلع تھر میں سال 2020 کے دوران کمسن بچوں کی اموات کا سلسلہ نہ رک سکا اور رواں سال بھی میں 800 بچے انتقال کرگئے۔

تھر میں گزشتہ پانچ برس کے دوران انتقال کرنے والے بچوں کی تعداد 3 ہزار سے زائد ہے۔محکمہ صحت کے اعدادشمار کے مطابق گزشتہ 5 سالوں کےدوران 3 ہزار سے زائد انتقال کرنے والے بچوں میں 300 سے زائد وہ بچے بھی شامل ہیں جو دنیا میں آنے سے قبل ہی انتقال کرگئے۔ محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ صرف رواں سال میں یہ تعداد 800 سے زائد پہنچ گئی ہے، مناسب غذا،خون کی کمی، بچوں کی پیدائش میں وقفہ نہ ہونا خواتین اور بچوں کی اموات کا بڑا سبب ہیں۔

متعلقہ خبریں