پاکستان

کابینہ اجلاس کی رپورٹس کہاں جاتی ہیں؟ اور یہ رپورٹس کون پہنچاتا ہے؟ تمام کردار بے نقاب ہو گئے اور نیا پینڈورا باکس بھی کھل گیا

کابینہ اجلاس سمیت اسلام ا ٓباد اور لاہور کے دو سرکاری اداروں کی ہر میٹنگ کی رپورٹ باقاعدہ جاتی عمرہ جاتی ہے: سینئر صحافی

کابینہ اجلاس کی رپورٹس کہاں جاتی ہیں؟ اور یہ رپورٹس کون پہنچاتا ہے؟ تمام کردار بے نقاب ہو گئے جس کے بعد ایک نیا پینڈورا باکس کھل گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق صحافی و تجزیہ کار رانا عظیم کا کہنا تھا کہ اسلام ا ٓباد اور لاہور کے دو سرکاری اداروں کی ہر میٹنگ کی رپورٹ باقاعدہ جاتی عمرہ جاتی ہے، لاہور میں وزیر اعلی ہاؤس اور اسلام آباد میں وزیر اعظم ہاؤس ہے،حکومت کی طرف سے اس معاملے پر ایک خاتون آفیسر کو ہٹایا بھی گیا۔ رانا عظیم نے کہا کہ ایک بڑی قد آور مذہبی اور سیاسی شخصیت بھی مائنس میں جارہی ہے، اس کا فیصلہ ہوگیا ہے۔ رانا عظیم کے ان انکشافات کے بعد حکومتی صفوں میں بھی ہلچل دکھائی دی ہے اور یہ معلوم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ آخر حکومتی حلقوں میں ایسا کون ہے جو حکومتی میٹنگز میں ہونے والی باتیں جاتی امرا پہنچا رہا ہے۔

سیاسی تجزیہ کاروں نے بھی اس حوالے سے تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ کابینہ میٹنگز میں ہونے والی باتوں کا جاتی امرا پہنچایا جانا حیرت کی بات ہے۔ عمران خان کو چاہیے کہ وہ اپنے ارد گرد نظر رکھیں اور دیکھیں کہ کون ان کے ساتھ غداری کر رہا ہے۔ دوسری جانب نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی)کے ناراض رہنما مولانا شجاع الملک نے کہا کہ جو دھرنا اسلام آباد میں ہوا تھا اس پر ہمیں کسی نے اعتماد میں نہیں لیا، سنا ہے کہ تحریک پر جو خرچہ آئے گا وہ دوسری پارٹیاں برداشت کرینگی اور مو لانا افرادی قوت مہیا کریں گے۔ جبکہ مسلم لیگ ن کے رہنما ڈاکٹر نثار چیمہ نے کہا کہ ہمارے پاس صرف استعفے ہی آپشن نہیں بلکہ بے شمار آپشنز موجود ہیں اگر کسی سیاسی جماعت کو کوئی ا ختلاف ہے تو اس کا فیصلہ بھی پی ڈی ایم کی قیادت نے کرنا ہے۔

متعلقہ خبریں