پاکستانفیچرڈ پوسٹ

اقامہ کیس میں خواجہ آصف کے بعد کس کس کی گرفتاری ہوگی؟ وزیراعظم کے مشیر بابر اعوان نے کھل کر بتا دیا

اقامہ کیسز کے زد میں ایک خاتون جس کا تعلق سندھ کی حکومتی جماعت سے ہے وہ آسکتی ہیں، ایک سابق وزیر داخلہ ہیں

اقامہ کیس میں مسلم لیگ ن کے رہنماء خواجہ آصف کی گرفتاری کے بعد اور کس کس کی گرفتار ہوگی، وزیراعظم کے مشیر بابر اعوان نے سب کچھ کھل کر بتا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مشیر وزیر اعظم برائے پارلیمانی امور بابر اعوان کا کہنا تھا کہ اقامہ کیسز کے زد میں ایک خاتون جس کا تعلق سندھ کی حکومتی جماعت سے ہے وہ آسکتی ہیں، ایک سابق وزیر داخلہ ہیں جس کے دور میں دھرنا ہوا تھا وہ آسکتے ہیں۔ بابراعوان نے بتایا کہ یہ وہ لوگ ہیں جن کے اقامے ثابت ہیں۔ایک صوبے کے چیف منسٹر بھی اس کی زد میں آسکتے ہیں اور بہت سے لوگ ہیں جن کا تعلق سندھ سے ہے۔ان میں سے کچھ سرکاری ملازم ہیں جن کو سزائیں ہوئیں، سزائیں ہونے کے بعد انہوں نے باہر جا کر اقامے لیے کچھ پیسے واپس کیے۔ انہوں نے کہا کہ ایک سیکرٹری جو پوری منسٹری کا ہیڈ تھا اس نے سوا ڈیڑھ کروڑ رپیہ واپس کیا اور باقی پیسوں سے اس نے جا کر اقامہ لیا اور وہ آتا جاتا رہا ہے۔ ڈاکٹر بابراعوان نے کہا کہ اقامے کا سب سے بڑا یہ فائدہ ہوتا ہے کہ اس بندے کو ایک کور مل جاتا ہے،جب کسی کو اقامہ مل جاتا ہے تو اگر آپ سرچ کریں گے کہ اس کی وہاں کتنی جائیداد ہیں تو و ہ بندہ آپ کو کہیں نہیں ملے گا۔

متعلقہ خبریں