پاکستان

سینیٹ انتخابات‘ شہباز شریف جیل میں بیٹھ کیا گیم کھیلنے والے ہیں؟ سینئر صحافی نے بڑے راز سے بھانڈا پھوڑ کر تہلکہ مچا دیا

شہباز شریف نے جیل میں بیٹھ کر ہی کام شروع کردیا ہے کہ آئندہ سینیٹ الیکشن کس کس کو نشستیں دینی ہیں

سینیٹ انتخابات کے حوالے سے صدر مسلم لیگ ن شہباز شریف جیل میں بیٹھ کیا گیم کھیلنے والے ہیں؟ سینئر صحافی نے بڑے راز سے بھانڈا پھوڑ کر تہلکہ مچا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی رانا عظیم نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے جیل میں بیٹھ کر ہی کام شروع کردیا ہے کہ آئندہ سینیٹ الیکشن کس کس کو نشستیں دینی ہیں، اس حوالے سے بہت سے لوگوں سے وعدے بھی کیے جاچکے ہین اور ان سے فنڈز بھی مانگ لیے گئے ہیں، اس وقت سابق وزیراعلی پنجاب کی حکمت عملی انتہائی کامیاب جارہی ہے، اسی لیے محمد علی درانی کی ان سے ملاقات کے بعد شہباز شریف گروپ میں سے کسی بھی ن لیگی رکن کا بیان سامنے نہیں آیا۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور شہباز شریف کی ملاقات میں یہ فیصلہ ہوگیا تھا کہ کسی صورت استعفے نہیں دیے جائیں گے اور ہر صورت سینیٹ کا الیکشن لڑیں گے، محمد علی درانی کی ملاقاتیں بنا کسی مقصد کے نہیں ہیں ان ملاقاتوں کے بعد یہ باتیں سامنے آئیں کہ پارلیمنٹ کے اندر رہ کر ہی احتجاج کیا جائے گا اور پارلیمنٹ کے اندر سے ہی تبدیلی کی بات کی جائے گی یہ سب کچھ طے ہوچکا ہے۔

صحافی رانا عظیم کے مطابق پیپلزپارٹی نے حکومتی اتحادی ایم کیو ایم سے ملاقاتیں شروع کردیں جس کا مقصد صرف یہ تھا کہ سیسنیٹ الیکشن کیلئے صف بندی کی جاسکے، اس ضمن مین جتنا فائدہ اٹھایا جاسکتا ہے وہ اٹھا لیں، جب کہ مسلم لیگ ن کی قیادت کا نظریہ تھا کہ سینیٹ الیکشن کسی بھی صورت میں نہیں ہونے چاہئیں، ایک تقریر میں خواجہ آصف نے یہ تک کہہ دیا تھا کہ ہم دیکھیں گے اس ملک میں کیسے سینیٹ الیکشن ہوتے ہیں لیکن پیپلزپارٹی سینیٹ میں دوسری بڑی جماعت بننے جارہی ہے تو وہ کیوں اپنا یہ موقع چھوڑیں گے لیکن موجودہ صورتحال میں ن لیگ بھی بائیکاٹ نہیں کرے گی۔

متعلقہ خبریں