پاکستانفیچرڈ پوسٹ

اسٹیبلشمنٹ نے پورے نظام کو یرغمال بنا لیا اس لئے اب ہم اسلام آباد کی طرف نہیں بلکہ؟ مولانا فضل الرحمن نے کھڑاک کر دیا

پی ڈی ایم کی قیادت فیصلہ کرے گی کہ لانگ مارچ اسلام آباد کی طرف کیا جائے گا یا پھر راولپنڈی کی طرف کیا جائے گا

جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کھڑاک کرتے ہوئے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ نے پورے نظام کو یرغمال بنا لیا اس لئے اب ہم اسلام آباد کی طرف نہیں بلکہ راولپنڈی کی طرف جائیں گے۔

پاکستان میں اپوزیشن کے سیاسی اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم)کے صدر مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ ہم ملکی اسٹیبلشمنٹ اور فوج کو دھاندلی کا مجرم سمجھتے ہیں، پی ڈی ایم کی قیادت فیصلہ کرے گی کہ لانگ مارچ اسلام آباد کی طرف کیا جائے گا یا پھر راولپنڈی کی طرف کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ‘ہم اس بات پر متفق ہیں کہ پاکستان کو ایک ڈیپ سٹیٹ بنا کر یہاں کی اسٹیبلشمنٹ نے پورے نظام کو یرغمال بنایا ہے اور عمران خان ایک مہرہ ہیں جن کے لیے انتخابات میں دھاندلی کی گئی اور ان کو قوم پر مسلط کیا اور ایک جھوٹی حکومت قائم کی۔’

مولانا فضل الرحمان کی زیرصدارت پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس جاتی امرا میں ہوا جس میں حکومت مخالف تحریک اور دیگر معاملات پر غور کیا گیا۔ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم واضح کر دینا چاہتے ہیں کہ ہم اسٹیبلشمنٹ اور فوجی قیادت کو اس کا مجرم سمجھتے ہیں اور ہماری تنقید کا رخ اب برملا ان کی طرف ہوگا اور اب ان کو سوچنا ہے کہ پاکستان کی سیاست پر اپنے پنجے گاڑھنے کا فیصلہ کرتے ہیں یا اس سے دستبردار ہو کر اپنی آئینی ذمہ داریوں کی طرف جاتے ہیں۔

متعلقہ خبریں